اے اين پی رہنما ملک عبیداللہ کاسی قتل

انہیں 26جون کو کچلاک سے اغواء کیا گیا تھا
فوٹو: ٹویٹر
فوٹو: ٹویٹر
[caption id="attachment_2347674" align="alignnone" width="800"]Ubaidullah Kasi فوٹو: ٹویٹر[/caption]

عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماء عبیداللہ کاسی کو اغواء کے بعد بلوچستان میں قتل کر دیا گیا۔

اسسٹنٹ کمشنر پشین حضرت علی کے مطابق عبیداللہ کاسی کو 26جون کو کچلاک سے اغواء کیا گیا تھا۔ ملک عبیداللہ کاسی کی تشدد زدہ لاش آج 40 دن بعد پشین کے علاقے سرانان ریلوے پھاٹک کے قریب سے ملی ہے۔

ملک عبيداللہ کاسی اے این پی کی مرکزی کمیٹی کے رکن تھے۔ اے این پی کی جانب سے انکے اغواء پر احتجاج بھی کیا گیا تھا۔

عبید اللہ کاسی کی لاش پوسٹ مارٹم کے لیے کوئٹہ منتقل کر دی گئی۔ اغواء کاروں نے عبید اللہ کاسی کے اہل خانہ سے رہائی کے بدلے تاوان کا مطالبہ کیا تھا۔

اس سے قبل عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی سیکریٹری اطلاعات اسد اللہ اچکزئی کو جرائم پیشہ افراد نے گاڑی سمیت اغواء کیا جس کے بعد انہیں قتل کیا گیا۔

اسد اللہ اچکزئی کی لاش رواں برس فروری میں کوئٹہ کے علاقے اغبرگ میں قائم کنویں سے ملی تھی جبکہ پولیس نے اسد اللہ اچکزئی کے قتل میں ملوث ملزمان کو گرفتار کر لیا تھا۔

MALIK UBAIDULLAH KASI

Tabool ads will show in this div