'بھارتی بورڈ کا جواب نہ آیا تو سمجھیں گے کہ سیریز نہیں ہوسکتی'

Sheharyer Khan Pc Lhr 11-12

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہر یار خان نے کہا ہے کہ پاک بھارت سیریز کے انعقاد کےلئے بھارتی کرکٹ بورڈ کی طرف سے جمعہ کی سہ پہر تک کوئی جواب نہیں آیا اور ہم اتوار تک ان کے جواب کا مزید انتظار کریں گے۔

قذافی سٹیڈیم لاہور میں ساگا پریمیئر لیگ ویمن ٹی ٹونٹی ٹورنامنٹ کے فائنل کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر بھارتی بورڈ کا اتوار تک بھی جواب نہیں آیا تو پھر ہم سمجھیں گے کہ سیریز نہیں ہوسکتی۔

بھارتی بورڈ نے پی سی بی کو کہا تھا کہ وہ سیریز کھیلنے کے لئے تیار ہے لیکن اپنی حکومت سے اجازت ملنے کا انتظار کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وقت کم ہونے کی وجہ سے پاک بھارت سیریز کے پہلے شیڈول پر عمل در آمد مشکل ہوگا۔

مزید پڑھیں: بھارتی وزیر خارجہ سے کرکٹ سیریز پر بھی بات ہوئی: سرتاج عزیز

شہریار خان کا کہنا تھا کہ پاک بھارت سیریز کی تیاریوں کے لئے اب فزیکل مشکلات ہوں گی جب کہ آئندہ ماہ بھارت کو سیریز کے لئے آسٹریلیا جانا ہے اور پاکستان کی نیوزی لینڈ کے ساتھ سیریز طے ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان کرکٹ سیریز نہیں ہوتی اسی قسم کو توڑنے کے لئے پاک بھارت سیریزکے لئے کوششیں کر رہے ہیں تاہم اب بھارت کو تجویز دیں گے کہ ابتدا میں جو معاہدہ ہوا تھا اسے جاری رکھتے ہوئے مستقبل میں ٹیسٹ سیریز بھی کھیلی جائے۔

مزید پڑھیں: بھارت کا کرکٹ سیریز پر یوٹرن

بھارت نے سیریز کھیلنے کے لئے ایم او یو پر دستخط کیئے تھے اور بھارت کو چاہیے کہ وہ سیریز کھیلنے کا اپنا وعدہ پورا کرے نہیں تو ہمیں صاف صاف جواب دے۔ بھارت کے انکار کی صورت میں ہم اپنا آئندہ لائحہ عمل تیار کریں گے۔

چیئرمین پی سی بی کا کہنا تھا کہ پاک بھارت سیریز کے لئے انگلش کرکٹ بورڈ کے سربراہ جائلز کلارک نے ثالث کا کردار ادا کیا اور وہ اب تک اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہیں جب کہ پاکستانی حکومت بھی سیریز کے حق میں ہے لیکن بھارتی بورڈ کی جانب سے اب تک کوئی جواب نہیں آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاک بھارت سیریز نہ ہوئی تو پھرایک سال انتظار کرنا ہوگا تاہم اب ہم ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی تیاریوں کے لئے پوری توجہ دے رہے ہیں۔ شہریار خان نے کہا کہ امید ہے کہ پاکستانی خواتین ٹی ٹونٹی ٹیم ورلڈکپ میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی۔ ایجنسی/سماء

pak-india series

Shehryar Khan

Tabool ads will show in this div