نور مقدم قتل کے مزید کردار، حقائق سامنے آنے کا دعویٰ

ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں 2روز کی توسیع
noor-mukadam فائل فوٹو

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے نور مقدم قتل کیس کے ملزم ظاہر جعفر کے جسمانی ریمانڈ میں 2 روز کی توسیع کردی جبکہ مدعی کے وکیل نے انکشاف کیا ہے کہ 40 گھنٹے طویل سی سی ٹی وی فوٹیج میں مزید کردار سامنے آئے ہیں۔

اسلام آباد میں قتل کی گئی نور مقدم کے قاتل ظاہر جعفر کو جسمانی ریمانڈ پورا ہونے پر جوڈیشل مجسٹریٹ محمد شعیب اختر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

پولیس نے ملزم کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جس کی وکیل مدعی شاہ خاور ایڈووکیٹ نے بھی حمایت کی۔ وکیل صفائی نے اس درخواست کی مخالفت کی۔

شاہ خاور ایڈووکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ 40 گھنٹوں کی فوٹیج میں بہت سی نئی چیزیں اور نئے کردار سامنے آئے ہیں، اس لئے تفتیش کو آگے بڑھانے کیلئے مزید ریمانڈ درکار ہے۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد ملزم کو مزید 2 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کرتے ہوئے 2 اگست کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا۔

Noor Muqaddam Murder Case

ZAHIR JAFFAR

Tabool ads will show in this div