افغان سفیر کی بیٹی نےپولیس کو بیان ریکارڈ کرادیا

اس نے والد کے خلاف بھی بات کی
فائل فوٹو

افغان سفیر کی بیٹی کا کہنا ہے کہ گھر سے کچھ دور ٹیکسی میں شاپینگ کیلئے گئی تھی۔ اچانک ایک شخص آیا اور ٹیکسی میں بیٹھ کر مجھ پر تشدد کرنے لگا۔

افغان سفیر کی بیٹی باضابطہ طور پولیس کو بیان ریکارڈ کرا دیا۔ اپنے ابتدائی بیان میں لڑکی کا کہنا ہے کہ گھر سے کچھ دور ٹیکسی میں شاپینگ کے لیے گئی۔ واپسی کے لیے دوسری ٹیکسی میں سوار ہوئی جو کچھ دیر بعد راستے روک دی گئی۔ اچانک ایک شخص آیا اور ٹیکسی میں سوار ہو کر مجھ پر تشدد کرنے لگا۔

اپنے بیان میں لڑکی کا مزید کہنا تھا کہ تشدد کے باعث میں بیہوش ہوگئی اور آنکھ کھلی تو پارک میں گندگی کے ڈھیر پر تھی۔

لڑکی کا یہ بھی کہنا تھا کہ میں گھر کے بجائے پارک میں چلی گئی۔ والد کے آفس کے کولیگ کو بلایا جو مجھے گھر لے کرگیا۔ افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا اور تشدد کا مقدمہ تھانہ کوہسار میں درج کیا گیا ہے۔

قبل ازیں وزیراعظم عمران خان نے افغان سفیر کی بیٹی کے اغواء کا نوٹس لیتے ہوئے ملزمان کو پکڑنے کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی ہے۔

انہوں نے حکم دیا کہ وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید، اسلام آباد پولیس اور قانون نافذ کرنے والے تمام ادارے ترجیحی بنیادوں پر معاملے کی تحقیقات کریں۔ تمام ادارے معاملے کی تحقیقات میں وفاقی پولیس کے ساتھ تعاون کریں۔

Tabool ads will show in this div