خیبر پختونخوا:سیاسی رہنماؤں،اہم شخصیات سےسیکیورٹی واپس لےلی گئی

حکومت نے اس اقدام کی وجہ نہیں بتائی
فائل فوٹو
فائل فوٹو
فائل فوٹو
فائل فوٹو
فائل فوٹو

خیبرپختونخوا حکومت نے سیاسی رہنماؤں اور اہم شخصیات سے سیکورٹی واپس لے لی ہے۔ جاری اعلامیہ میں سیکیورٹی واپس لینے کی وجہ نہیں بتائی گئی ہے۔

آفس آف سپریٹنڈنٹ آف پولیس ایلیٹ فورس پشاور کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق اے این پی رہنما میاں افتخار حسین، امیر حیدر ہوتی، ایمل ولی خان سے مجموعی طور 12 سیکیورٹی اہلکار واپس لے لیے گئے ہیں۔

آفتاب شیرپاؤ سے ایک، ن لیگ کے صوبائی صدر امیر مقام سے بھی 3 سیکیورٹی اہلکار واپس لے لیے گئے۔ نوابزادہ امیر خان، ڈاکٹر نعیم اور ڈاکٹر افتخار کی سیکیورٹی پر مامور پولیس اہلکار بھی واپس لے لیے گئے۔ پی ٹی آئی کے ایم این اے انور تاج اور سینیٹر ایوب آفریدی سے مجموعی طور 4 سیکیورٹی اہلکار واپس لیے گئے۔

پی ٹی آئی کے ایم پی اے صومی فلک ناز سے ایک، اے این پی کے صلاالدین سے بھی ایک سیکیورٹی اہلکار، جب کہ ڈی جی نیب خیبرپختونخوا ناصر فاروق اعوان سے 7 اہلکار واپس لے لیے گئے۔

تمام سیکیورٹی اہل کاروں کو واپس ایلیٹ فورس ہیڈکواٹرز رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ جاری اعلامیہ کے مطابق مجموعی طور پر 29 شخصیات سے سیکیورٹی واپس لی گئی ہے۔

Tabool ads will show in this div