کراچی:موسم کی پیشگی اوردرست اطلاع دینے والے ریڈار نے کام شروع کردیا

ڈوپلرریڈارسسٹم کےلیےبنایا گیا17 منزلہ ٹاور 71 میٹر بلند ہونےکےساتھ زلزلہ پروف بھی ہے
Jun 04, 2021

کراچی میں جاپان کے تعاون سے نصب کیا جانے والا ڈوپلر ریڈار نے کام کرنا شروع کردیا ہے۔

کراچی  میں محکمہ موسمیات نے پی ایم ڈی کراچی آبزرویٹری کو 30 سال بعد تبدیل کردیا ہے۔سال 1991 میں نصب اینالاگ ریڈار نظام کی جگہ جدید  ٹیکنالوجی سے آراستہ نئے ڈوپلر ریڈار سسٹم نے لے لی ہے۔ ڈوپلر ریڈار سسٹم کےلیےبنایا گیا 17 منزلہ ٹاور 71 میٹر بلند ہونے کے ساتھ زلزلہ پروف بھی ہے۔یہ ریڈار کئی گنا تیزی اور درستگی کےساتھ موسمی تبدیلیوں سے آگاہ کرسکےگا۔ جاپان کی حکومت نےکراچی آبزرویٹری کو یہ ٹیکنالوجی دینے کے ساتھ اس کی تنصیب اور استعمال کی تربیت بھی فراہم کی ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ نئے ریڈار فعال ہونے کے بعد بارش کی پیشگوئی میں واضح بہتری آئے گی اور یہ بھی  پیشگی بتایا جاسکے  گا کہ کس علاقے میں  کتنی بارش ہوگی۔محکمہ موسمیات کی ویب سائٹ پرکراچی ڈوپلر ریڈار کا لنک جاری کردیا گیا ہے جہاں سےڈوپلر ریڈار سے حاصل ہونے والا ڈیٹا دیکھا جا سکتا ہے۔ ریڈار کی بدولت 450 کلومیٹر کے دائرے میں بارشوں اور 200 کلومیٹر تک تیز ہواؤں کی پیش گوئی ممکن ہوسکے گی۔ اس ریڈار کا فائدہ میری ٹائم ٹریفک،ایوی ایشن کنٹرول اورماہی گیربھی اٹھاسکتے ہیں۔

ڈائریکٹر موسمیات سردار سرفراز نے بتایا ہے کہ آٹومیٹک ویدراسٹیشن  اولڈ ائرپورٹ، پہلوان گوٹھ آبرزویٹری پر نصب کیا گیا ہے۔ ملک بھر میں جاپان کے تعاون سے45 آٹومیٹک ویدراسٹیشن نصب کیے جائینگے۔17اے ڈبلیو ایس دیہی سندھ اور27پنجاب کے مختلف شہروں میں نصب ہونگے۔

کراچی کے بعد اگلا اے ڈبلیو ایس اسلام آباد جبکہ تیسرا لاہورمیں نصب کیا جائے گا۔ 45 اے ڈبلیو ایس پر560  ملین روپے کی لاگت آئی ہے جو جاپان نے فراہم کیے ہے۔ آٹومیٹک ویدر اسٹیشن کے ذریعے10 منٹ کی فریکوینسی کا ڈیٹا ریکارڈ ہوسکے گا۔

MET OFFICE

karachi weather

Tabool ads will show in this div