کالمز / بلاگ

خدا سے مانگنا سکھا دیا

سو لفظوں کی کہانی

انکل آپ کے کرتے کی سلائی بہت نفیس ہے، ابو کو دیکھ کر لڑکا بولا۔

جوتے کا رنگ کمال تو موبائل کور میں چوائس لاجواب ہے،

گاڑی کے پاس پہنچے تو وہ بولا، گاڑی کی چمک آپ کی نفاست کی چغلی کھا رہی ہے۔

ابو نے چابی لگائی تو اس کی آنکھوں سے آنسو اسٹارٹ ہوگئے۔

بیٹا کیا بات ہے؟ ابو نے پوچھا

دو سمسٹرز کی فیس ادا کرنی ہے، لڑکے کے کچھ اور بولنے سے پہلے ابو نے ایک برس کی فیس کا چیک اس کو تھما دیا۔

 میں نے تجسس سے پوچھا، ابو اتنے پیسے؟،

ابو نے آنسو کو انگلی سے روکتے ہوئے کہا ’’اس نے مجھے خدا سے مانگنا سکھا دیا‘‘۔

بلاگ

Tabool ads will show in this div