کراچی میں 24 گھنٹوں کے دوران پوليس اہلکارسميت 13 افراد جانبحق

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ


کراچی : کراچی کے مختلف علاقوں میں فائرنگ اورپرتشدد واقعات میں 24 گھنٹوں کے اندرپوليس اہلکارسميت 13 افراد کي جان لے لي گئي۔ ،صرف لياري ميں 2 گھنٹوں ميں 5افراد کو موت کي نيند سلاديا گيا ۔ دوسري جانب کورنگی انڈسٹریل ایریاکے قریب پولیس مقابلہ ميں دو ڈاکومارے گئے


کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کی لہر رکنے کا نام نہیں لے رہی۔۔ شہر میں روزانہ متعدد افراد قاتلوں کی گولیوں کا نشانہ بن جاتے ہیں۔۔ لياري ميں صرف آدھے گھنٹے ميں چار افراد کو فائرنگ کرکے قتل کرديا گيا ، پوليس کے مطابق بہارکالوني سے دوافراد کي لاشيں مليں ، جس کے کچھ ہی دیر بعد بعد مرزاآدم خان روڈ ، چاکيواڑہ اورکشتي چوک کے قريب سے بھي تين افراد کي لاشيں مليں، جنھيں گوليوں کا نشانہ بنايا گيا،کورنگي نمبرپانچ ميں بھي فائرنگ سے ايک شخص جان سے گيا۔ جبکہ ہفتے کے روز اورنگی ٹاؤن فقیر کالونی میں فائرنگ کر کے پولیس کے سب انسپکٹرامین کو موت کی نیند سلا دیا گیا۔


اورنگی ٹاؤن ہی کی ۔۔ ایم پی آر کالونی۔۔ میں پینتیس سالہ جبین گل کی جان لے لی گئی۔۔ قصبہ موڑ کے قریب بھی ایک شخص کو قتل کر دیا گیا۔۔ مقتول کی شناخت نہ ہوسکی۔۔ منگھوپیر گرم چشمہ کے قریب فائرنگ سے جہانگیر بلوچ جاں بحق ہو گیا۔۔ بلديہ ٹاؤن ميں کلہاڑی کے وار سے ايک شخص کی زندگی کا چراغ گل کر دیا گیا۔۔ ناردرن بائی پاس کے قریب سے ایک شخص کی لاش ملی۔۔ جسے تشدد کے بعد فائرنگ کرکے قتل کیاگیا۔۔ شيرشاہ ميں بھي فائرنگ کي گئي اورايک شخص جان سے گيا ،جبکہ مزار قائد کے قریب کچرا کنڈی سے نوزائیدہ بچی کی لاش ملی۔۔ ادھرکورنگي انڈسٹريل ایریا میں پولیس مقابلے ميں دوڈاکومارے گئے جن کي شناخٹ مختار اور عباس کے نام سے ہوئی۔ سماء

میں

کے

burger

MQM

Airport

britain

damages

Tabool ads will show in this div