ماضی کا آئینہ دار گھر جہاں آپ بآسانی جاسکتے ہیں

نئے کراچی میں پرانے شہر کی شاندار جھلک
Apr 14, 2021

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/04/Karachi-Unique-Home-KHI-PKG-13-04-REms.mp4"][/video]

کیا آپ جانتے ہیں کہ کراچی میں ایک ایسا گھر بھی ہے جو یہودی، عیسائی، ہندو اور مسلمان خاندانوں کی رہائشگاہ رہنے کے ساتھ ساتھ ثقافت کا آئینہ دار بھی ہے۔

گھنے درختوں میں گھرا یہ دو منزلہ قدیم مکان جمشید کوارٹر میں واقع ہے جہاں اس ثقافتی ورثے کو بڑی خوبصورتی سے محفوظ کیا گیا ہے۔

یہ گھر سن 1920ء میں تعمیر ہوا اور 1960ء سے یہ اب داؤد فاؤنڈیشن کی ملکیت ہے۔ سن 2016ء میں گھر کی تزین و آرائش سابقہ حالت کو تبدیل کیے بغیر پرانے طرز پر کی گئی ہے جو دیکھنے والے کا دل لبھاتی ہے اور یہاں آنے والے پُرسکون ماحول میں گپ شپ اور پرانے کراچی کو یاد کرتے ہیں۔

یہاں پرانے دور میں استعمال ہونے والی اشیاء اور قدیم فرنیچر کو نفاست سے رکھا گیا ہے جبکہ فرش پر لگے دلکش نقوش والے ٹائلز بھی اس گھر کی زینت کو چار چاند لگاتے ہیں۔

کراچی کی نایاب تصاویر کو گھر کی دیواروں پر اس انداز میں سجایا گیا ہے کہ انسان ماضی میں کھو کر رہ جائے، اس کے علاوہ یہاں کتب بینی کے شوقین افراد کیلئے لائبریری بھی قائم کی گئی ہے۔

اس مکان کی ایک اور خاصیت یہ ہے کہ شہر کے وسط میں ہونے کی وجہ سے اس کی چھت سے مزار قائد کا نظارہ بھی کیا جاسکتا ہے جو بڑا دلفریب ہوتا ہے۔ نئے کراچی میں قدیم شہر کا شاندار نمونہ یہ گھر اپنی مثال آپ ہے۔

یہ گھر ایک میوزیم کی حیثیت رکھتا ہے اور اسے سماجی تقریبات کیلئے بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اس گھر میں داخلے کیلئے 50 روپے فیس بھی رکھی گئی ہے، جبکہ کھانے پینے کیلئے صحن میں ایک کینٹین بھی موجود ہے۔

Tabool ads will show in this div