شہادتوں سےمتعلق منورحسن کابیان،جماعت اسلامی کامشاورتی اجلاس

ویب ڈیسک:
لاہور : جماعت اسلامی کے امیر سید منور حسن کے حالیہ شہید افراد سے متعلق بیان پر جماعت اسلامی کا مشاورتی اجلاس ہیڈ کواٹرز منصورہ میں جاری ہے۔ اجلا میں جماعت اسلامی کے امیر کے بیان پر غور کیا جارہا ہے۔

اجلاس میں لیاقت بلوچ، فرید پراچہ، حافظ سلمان بٹ اور دیگر  سینیر اراکین شریک ہیں۔ جماعت اسلامی اجلاس کے بعد آئی ایس پی آڑ کی جانب سے دیئے گئے غیر معمولی بیان پر رد عمل جاری کرے گی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران منور حسن بدستور اپنے بیان اور مؤقف پر قائم رہنے کا اصرار کرتے رہے۔

منور حسن کے بیان کے بعد ملکی سطح پر انہیں سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ مختلف سیاسی اور مذہبی جماعتوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے منور حسن کے بیان پر از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے، جب کہ دیگر جماعتوں نے منور حسن سے معافی مانگیں اور جماعت اسلامی کے امیر کی حیثیت سے ہٹانے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

واضع رہے کہ منور حسن نے نجی ٹی وی کو انٹرویو میں کالعدم تنظیم کے دہشت گرد سربراہ اور ہزاروں بے گناہ افراد کے سفاک قاتل حکیم اللہ محسود کو شہادت جیسے عظیم اور بڑے مرتبے پر خود ساختہ فتویٰ گرانتے ہوئے شہید کا لقب دیا تھا، جب کہ خود کش حملوں اور دھماکوں میں شہید معصوم اور بے گناہ شہریوں اور سیکیورٹی اہل کاروں کیلئے شہادت کا لفظ اخذ کردیا تھا، وہ اس بات سے انکاری تھے کہ حملوں و دھماکوں میں جاں بحق افراد اور دہشت گردوں کے خلاف ملک کے دفاع میں جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے پاک افواج کے بہادر سپوت شہید نہیں، بلکہ امریکی ایجنڈ ہیں۔ سماء

اجلاس

comedian

Tabool ads will show in this div