سوات میں کم بارش، پھلوں کی پیداوار میں اضافے کاامکان

رواں برس پھلوں کی بہتات کی امید

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/04/MZ-SWAT-FRUIT-PKG-KAZIM-03-04.mp4"][/video]

موسم بہار نے جہاں سوات کا حسن نکھار دیا ہے اور ہریالی و لہلہاتے پھولوں سے وادی کی رونقیں مزید بڑھ چکی ہیں، وہیں پھل دار درختوں نے اچھی پیدوار کی نوید بھی سنادی ہے۔

ماہرین کے مطابق کم بارشیں ہونے سے اچھی پیدوارکی امید ہے۔ واضح رہے کہ سوات میں صرف آڑو کی پیدوار ہی 50 ہزار میٹرک ٹن ہے۔

زرعی سائنسدان ڈاکٹرخلیل الرحمٰن کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال کی نسبت اس سال پھول اگنے کے دوران بارشیں کم ہوئی ہیں، جس سے پیداوار پر اچھے اثرات پڑنے کے امکانات ہیں۔

زرعی تحقیقاتی ادارے کے ماہرین کے مطابق کسان ماہرین کے بتائے ہوئے طریقوں پر عمل کریں تو پھلوں کی پیدوار سے خوب کمائی حاصل کرسکتے ہیں۔

ڈائریکٹر زرعی تحقیقاتی ادارہ ڈاکٹر محمد ایاز کا کہنا ہے کہ زمینداروں کو چاہئے کہ وہ زرعی ماہرین سے استفادہ کریں تاکہ ان کے باغات بیماریوں سے محفوظ رہيں اور پیدوار اچھی ہو۔

دوسری جانب کسانوں نے حکومت سے رعايتی نرخوں پر اعلیٰ معیار کی زرعی ادویات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ اُنہیں محنت کا اچھا صلہ مل سکے۔

Tabool ads will show in this div