مریم نواز شریف کی 26مارچ کو نیب میں پیشی ملتوی

فیصلہ کروناوباء کی تیسری لہر کے تناظر میں کیاگیا، نیب
Mar 25, 2021

نیب نے مریم نواز شریف کی 26 مارچ کو لاہور نیب آفس میں پیشی ملتوی کردی۔ قومی احتساب بیورو کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس وباء کی تیسری لہر سے متعلق این سی او سی کی جانب سے اٹھائے گئے احتیاطی اقدامات کے پیش نظر ن لیگی رہنماء کی پیشی ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ مریم نواز نے فیصلے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے نیب پر کڑی تنقید کی۔ ان کا کہنا تھا کہ نیب کیلئے آسان شکار نہیں بنوں گی۔

قومی احتساب بیورو کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ اعلیٰ سطح کے اجلاس میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف کی 26 مارچ کو نیب لاہور میں پیشی اور نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری ملک میں کرونا وائرس کی تیسری اور شدید لہر سے متعلق حالیہ ہدایات کا جائزہ لیا گیا۔

نیب کا کہنا ہے کہ این سی او سی نے ملک بھر میں کرونا وائرس کی تازہ صورتحال کے تناظر میں ہر نوعیت کے ہجوم اکٹھا کرنے پر مکمل پابندی عائد کی ہے، ان اقدامات کے تناظر میں مریم نواز شریف کی 26 مارچ کو نیب لاہور آفس میں پیشی ملتوی کردی گئی ہے، نئی تاریخ کا اعلان مناسب وقت پر کیا جائے گا، اس حوالے سے تمام سیکیورٹی اقدامات ختم کرنے کی ہدایت جاری کردی گئی ہے۔

نیب کا مزید کہنا ہے کہ مریم نواز کی گزشتہ پیشی پر نیب لاہور کی عمارت پر دانستہ شدید پتھراؤ کیا گیا جو نیب کی تفتیش میں رکاوٹ ڈالنے کے مترادف ہے جبکہ ملزمان کیخلاف اس غیر قانونی برتاؤ کی ایف آئی آر بھی درج کرائی گئی تھی۔

مزید جانیے: لاہور ہائیکورٹ نے مريم نواز کی 12 اپریل تک عبوری ضمانت منظور کرلی

اعلامیے میں واضح کیا گیا ہے نیب کی تحقیقات میں عدم تعاون، رخنہ ڈالنے یا گمراہ کرنے کی صورت میں 10 سال تک قید کی سزا سنائی جاسکتی ہے، ان قانونی اختیارات کے باوجود نیب کی جانب سے تاحال انتہائی صبر و تحمل کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔

نیب کا کہنا ہے کہ ادارے کو دباؤ میں لانے کیلئے مختلف حربوں کے استعمال جیسے تمام اقدامات کی سختی سے نفی کرتے ہیں، یہ انسداد بدعنوانی کا معتبر ادارہ ہے جس کا جسی سیاسی گروہ یا جماعت سے کوئی تعلق نہیں۔

مریم نواز کا ردعمل

مریم نواز شریف نے نیب کے فیصلے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیب کیلئے آسان شکار نہیں بنوں گی، ظلم جب حد سے بڑھتا ہے تو مٹ جاتا ہے، ظلم کے مٹنے کے دن آگئے ہیں، کرونا میں ملوث ہونے کے باوجود وزیراعظم نے اجلاس کیا، کرونا میں پکڑنا ہے تو عمران خان کو پکڑنا چاہئے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے الزام لگایا کہ دنیا جانتی ہے نیب سیاسی، انتقامی ادارہ ہے، سیاسی مخالف کو 6 ماہ جیل میں ڈالنے کیلئے نیب استعمال ہوتا ہے۔ مریم نے انتہائی سخت زبان استعمال کرتے ہوئے کہا کہ جب تمہارا مالک مشکل میں آتا ہے تو اس کی مدد کیلئے پہنچتے ہو، اب یہ سب ہتھکنڈے ناکام ہوچکے ہیں، جس کیس میں بلایا تھا اس میں 48 دن نیب میں رکھا گیا۔

ن لیگی رہنماء نے اپنے بیان میں مزید کہا کہ اداروں کے خلاف بیان بازی کا چوکیدار نیب کو کس نے بنایا، نیب کو مریم نواز اور مسلم لیگ ن پر استعمال نہ کرنا، مریم نواز، مسلم لیگ ن تمہاری نیب اور جیلوں سے نہیں ڈرتی۔

ان کا کہنا ہے کہ نیب اتنی بہادر ہے کہ بار بار نوٹس دیتی ہے، نیب کے سیاسی نوٹس کا عوام نے سختی سے نوٹس لیا، نیب کو وہ نوٹس واپس لینا پڑ گیا۔

MARYAM NAWAZ SHARIF