کوہاٹ: ساڑھے تین سالہ بچی ریپ کے بعد قتل

تشدد زدہ لاش گھر سے 2کلو میٹر دور سے ملی
Mar 25, 2021

کوہاٹ میں ساڑھے تین سالہ بچی کو مبینہ طور پر ریپ کے بعد قتل کردیا گیا، تشدد زدہ لاش قریبی نالے سے ملی، لواحقین اور اہل علاقہ نے احتجاج کرتے ہوئے انصاف کی اپیل کردی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان کو جلد گرفتار کرلیں گے۔

پولیس کے مطابق کوہاٹ کے علاقے خٹک کالونی کی رہائشی ساڑھے 3 سالہ بچی گزشتہ روز (بدھ کو) لاپتہ ہوگئی تھی، اہل خانہ اور علاقہ مکینوں نے رات بھر بچی کو تلاش کیا تاہم وہ کہیں نہ ملی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جمعرات کی صبح سویرے بچی کی تشدد زدہ لاش خٹک کالونی سے دو کلو میٹر دور نالے سے ملی، جسے ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کردیا گیا، جہاں ڈاکٹروں نے بچی کی گردن اور سینے پر تشدد کے نشانات کی تصدیق کی۔

بچی کے لواحقین اور اہل علاقہ نے لاش یونیورسٹی روڈ پر رکھ  کر احتجاج کیا، ان کا دعویٰ ہے کہ بچی کو ریپ اور تشدد کے بعد قتل کیا گیا۔ پولیس کی ٹیموں نے مختلف زاویوں سے واقعے کی تفتیش شروع کردی ہے۔

ڈی آئی جی طیب حفیظ چیمہ نے اس مقام کا دورہ کیا جہاں سے بچی کی لاش ملی اور لواحقین سے ملاقات کی۔ انہوں نے کہا کہ قاتلوں کو ہر صورت گرفتار کیا جائے گا، فارنزک شواہد جمع کر لیے گئے ہیں۔

دوسری جانب پوسٹ مارٹم میں غفلت برتنے پر ضلعی انتظامیہ نے 2 لیڈی ڈاکٹروں کو معطل کردیا۔ بچی سے ریپ کے الزامات کے باوجود پوسٹ مارٹم رپورٹ ابھی تک نہیں آئی۔

Kohat

Girl Rape and Murder

Tabool ads will show in this div