وزیر اعظم کوویکسین کےباوجود کرونا کیوں ہوا،وزارت صحت کی وضاحت

عمران خان کو 15 مارچ کو کرونا ویکسین لگی تھی
Mar 20, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/03/arham-bpr1.mp4"][/video]

وزیر اعظم عمران خان کو دو روز قبل ہی یعنی 18 مارچ کو کرونا ویکسین لگائی گئی تھی جس کے باوجود ہلکی کھانسی اور بخار کے بعد ہفتے کو ان کا کرونا ٹیسٹ مثبت آگیا تاہم اس معاملے پر وزارت صحت نے وضاحت کردی ہے۔

وزارت صحت کا کہنا ہے کہ وزیراعظم جب کرونا کا شکار ہوئے اس وقت انہیں ویکسین کا پہلا ہی ڈوز لگا تھا اور اس حوالے سے اگلا مرحلہ ابھی باقی تھا۔

عمران خان کا کرونا ٹیسٹ مثبت آگیا

وزارت صحت کا کہنا ہے کہ 2 دن کا وقت ویکسین کے موثر ہونے کے لیے کافی نہیں ہوتا کیوں کہ ایک تو یہ ابھی پہلا ڈوز تھا دوسرے یہ کہ جسم میں کرونا وائرس پر قابو پانے والی اینٹی باڈیز دوسری خوراک لگنے کے دو تین ہفتے بعد بنتی ہیں۔

واضح رہے کہ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل نے ہفتے کو تصدیق کی ہے کہ عمران خان کا کرونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس کے بعد انہوں نے خود کو گھر میں قرنطینہ کرلیا ہے اور وہ وہیں سے سرکاری امور انجام دیں گے۔

وزیراعظم نے کرونا وائرس ویکسین لگوالی

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے 18 مارچ کو کرونا سے بچاو کی ویکسین لگوائی تھی۔ اس حوالے سے انہوں نے عوامی طریقہ کار پر اپناتے ہوئے خود کو 1166 پر رجسٹرڈ کروایا تھا اور پھر اپنی باری آنے پر ویکسین لگوائی۔

PM IMRAN KHAN

COVID-19

VACCINATION CENTERS

COVID NEWS

Government Updates

Vaccine Updates Get Tested

Tabool ads will show in this div