مومن ثاقب ''کووڈ-19 یوتھ ہیرو''قرار

یہ اعزاز رفاہی خدمات کےاعتراف میں دیاگیا
تصویر:مومن ثاقب/انسٹاگرام

دولت مشترکہ نے برطانوی پاکستانی طالب علم مومن ثاقب کو کووڈ 19 یوتھ ہیرو نامزد کیا ہے۔ مومن کویہ اعزازان کی رفاہی خدمات کے اعتراف میں دیا گیا۔

مومن نے برٹش پاکستانی ہوٹل مالک راجہ سلیمان رضا اورعارف ملک کے ہمراہ مارچ 2020 میں رضاکاروں کی ایک ٹیم تشکیل دی جس کی مدد سےنیشنل ہیلتھ سروس (این ایچ ایس) کےعملے اورپولیس سمیت ، اسکولوں کے عملے اور فائرفائٹرزکومفت گرم کھانا مہیا کرنے میں مدد ملی۔اب تک 47 اسپتالوں، ٹرسٹس اور فوڈ بینکس کے ذریعہ 200 سے زائد مقامات پر کھانا ومشروبات فراہم کیا جاچکا ہے۔

اس مشن میں مومن کو اسٹار فٹبالر ڈیوڈ بیکہم اور باکسرعامر خان کا تعاون بھی حاصل رہا۔

اس اقدام کو بی بی سی، اسکائی نیوز اور دی گارڈین سمیت دیگر نے نمایاں کوریج دی۔

اس سے قبل کنگزمومن نے بطورطالبعلم کنگزکالج لندن اسٹوڈنٹس یونین کے 144 برسوں میں پہلا نان یورپی یونین صدر منتخب ہونے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔بش ہاؤس نے انہیں اعزازی لائف ممبرشپ سے نوازا گیا اور انکے نام کی تختی بھی نصب کی گئی۔

کووڈ 19 ہیرو کا اعزازحاصل کرنے پر کنگز کالج لندن نے اپنی ٹویٹ میں مومن کو مبارک باد دی۔

دولت مشترکہ خودمختارریاستوں کی ایک رضاکارانہ تنظیم ہے جس میں برطانونی حکمرانی میں رہنے والے 54 آزاد اورمساوی ممالک شامل ہیں۔

مومن کی اصل وجہ شہرت آئی سی سی ورلڈ کپ 2019 کے دوران پاکستانی ٹیم کی ناقص کارکردگی پرمایوسی ظاہرکرتے ہوئے ایک ویڈیو وائرل ہونا ہے جس میں وہ کہتے ہیں '' ایک ہی پل میں جذبات بدل دیے، حالات بدل دیے، مارو مجھے مارو"۔ اس ویڈیو کے بعد سے مومن مخلتف حوالوں سے میڈیا پرآتے رہے۔

فلم ''دم مستم '' کے سیٹ سے عمران اشرف اور مومن ثاقب کی پُرمزاح ویڈیو

سماجی خدمات کے علاوہ مومن پاکستانی میڈیا انڈسٹری میں بھی قدم رکھ چکے ہیں۔ ان کا آن ائرڈرامہ '' رقص بسمل '' ہے جس کے علاوہ وہ ایک فلم '' دم مستم '' بھی کررہے ہیں۔

COMMON WEALTH

momin Saqib

Tabool ads will show in this div