سینیٹ الیکشن:کسی حکومتی رہنما نے پیسہ نہیں لیا،غلام سرور

یہ پاکستان کا مسئلہ ہے
Mar 13, 2021

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/03/Ptv-Ghulam-Sarwar-Pc-13-03.mp4"][/video]

وفاقی وزیر سرور خان نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف باہر بیٹھ کر پاکستان کےخلاف بات کرے تو یہ معمولی بات نہیں ہے،یہ پاکستان کا مسئلہ ہے۔نوازشریف نےملکی سیاست میں دھونس،دھاندلی اورکرپشن کوفروغ دیاہے۔

اسلام آباد میں ہفتے کو پریس کانفرنس کرتےہوئے غلام سرور خان نے کہا کہ حکومت کا سارا فوکس مہنگائی ہے۔عوام کے لیے 50 ارب روپے کا زراعت کے لیے پیکج دیا جبکہ اشیاء خوردنی پر بھی پیکج دیا ہے۔

سینیٹ الیکشن سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ حکومت کا کوئی شخص نہیں بکا۔کن کےضمیر جاگے یہ تو ہمیں نہیں معلوم لیکن الیکشن شفاف ہونے پر بات کی جاتی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ یہ موقع آئینی ترمیم کے لیے تھا لیکن پی ڈی ایم نے اُس کی مخالفت کی۔

انھوں نےمزید کہا کہ سینیٹ الیکشن کے لیے اوپن بیلٹ کا آپشن دیا لیکن اپوزیشن نہیں مانی۔ اگرسیٹ کے لحاظ سےحصہ لے لیتے توایسا نہیں ہوتا۔سپریم کورٹ کی ہدایت تھی کہ ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جائے، کیمرہ نے بتانا تھا کہ کون کیا کر رہا ہے۔ تاہم ہم نے کیمرہ نہیں لگائے البتہ سپریم کورٹ کی ہدایات کوہوسکتا ہے کہ کسی ادارے نے فالو کیا ہو۔

سابق وزیراعظم نوازشریف سے متعلق انھوں نے کہا کہ وہ کرپشن کو نچلے درجہ پر لے کرگئے ہیں اورنواز شریف کو بہت لوگوں سے اچھا جانتا ہوں۔ نواز شریف نے ایمان و ضمیر خریدے۔ ان کی میڈیکل رپورٹس ایسی رپورٹ بنائی گئی کہ جیسے ان کو سانس نہیں آئے گی۔

ملکی سیاست سے متعلق انھوں نے کہا کہ سیاست عبادت کا نام ہے اور جس کے لیے وقت دیتے ہیں۔جو جتنا برا ہے اس کو اتنا معزز بنا کر بھیجا جاتا ہے۔

SENATE ELECTIONS 2021

Tabool ads will show in this div