یوسف رضا گیلانی کی کامیابی،نوٹیفیکیشن روکنےکی استدعا مسترد

مزید سماعت 22مارچ کوہوگی

الیکشن کمیشن نے یوسف رضا گیلانی نااہلی کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے ان کی کامیابی کا نوٹیفیکیشن روکنےکی استدعا مسترد کردی ہے۔ نااہلی درخواستوں پر مزید سماعت 22 مارچ کو ہوگی۔

الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی کے 4 اراکین کی جانب پیپلزپارٹی رہنما یوسف رضا گیلانی کی سینیٹ انتخابات میں کامیابی کا نوٹی فیکیشن روکنے کی استدعا کی گئی تھی۔ سپریم کورٹ نے استدعا مسترد کردی تاہم درخواست کو ابتدائی سماعت کےلیے منظور کرتے ہوئے یوسف رضا گیلانی اور ان کے بیٹےعلی گیلانی کوویڈیو اسکینڈل میں نوٹس بھی جاری کیا گیا ہے۔

وزیرداخلہ شیخ رشید نے سماء سے بات کرتےہوئے کہا کہ قانونی محاذپرنوٹیفیکیشن مسترد ہونا کوئی دھچکا نہیں ہے۔ یوسف رضا گیلانی پیسوں سے جیتے ہیں۔ اس وقت اگر یوسف رضا گیلانی ڈس کوالیفائی ہوجاتے تو صورتحال عجیب ہوجاتی۔ سینیٹ انتخابات میں فیصل واوڈا اور یوسف رضا گیلانی دونوں ووٹ کاسٹ کریں گے۔انھوں نےمزید کہا کہ ویڈیواسکینڈل میں شواہد کو ثابت کرنا قانونی ماہرین کا کام ہے۔

علی گیلانی سے ملنےوالے ارکان اسمبلی کوسامنے لائیں، الیکشن کمیشن

پی ٹی آئی رہنما ملیکہ بخاری نےپریس کانفرنس میں بتایا کہ الیکشن کمیشن نے اپنا فیصلہ سنا دیا ہے اورپہلا حصہ تھا کہ درخواست قابل سماعت قراردیں۔دوسرا حصہ تھا کہ پارلیمان کوداغ دار ہونے سے روکیں۔پی ٹی آئی کی درخواست کا پہلا حصہ قبول ہوگیا ہے۔ یوسف رضا گیلانی اوران کے بیٹے کو نوٹس جاری ہوگیا ہے۔

پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنماء رانا ثنا اللہ نے کہا کہ چئیرمین سینیٹ کےلیے لئےپی ڈی ایم امیدوار کےووٹ زیادہ ہیں۔حکومت بھرپور کوشش کررہی ہے کہ اپوزیشن کے ووٹ توڑے اور اپنے چئیرمین کو کامیاب کریں۔ الیکشن کمیشن کو کی گئی استدعا کا کوئی جواز نہیں بنتا تھا۔ پی ٹی آئی نے جو ویڈیو بنوائی اور ایک اسٹنگ آپریشن تھا۔ الیکشن کمیشن کا فیصلہ قانون اور آئین کے مطابق ہے۔

سینٹ الیکشن: علی موسیٰ گیلانی کی ویڈیو وائرل

رانا ثناء نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ نون کو چئیرمین سینیٹ انتخابات کے لیے ووٹرز اپنا ووٹ یوسف رضا گیلانی کو دیں گے۔ ڈپٹی چئیرمین کےلیے مولانا عبدالغفورحیدری کو دیں گے اور اس میں کوئی شبہ نہیں ہونا چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ اگر اخلاقی جواز پر جانا ہے تو پوری حکومت کو اسکینڈلز پر مستعفی ہوجانا چاہئے۔

yousaf raza gillani

Tabool ads will show in this div