جاپان میں '' وزیرتنہائی'' کا تقرر

مقصد خودکشی کے رجحان کا خاتمہ ہے

جاپان کی حکومت نے ملک میں خودکشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کے بعد '' وزیر تنہائی '' تعینات کردیا ہے۔

جاپان ٹائمز کے مطابق یہ اقدام ملک کے رہائشیوں میں معاشرتی دوری اورتنہائی کو کم کرنے کے لئے اٹھایا گیا۔

یہ اعلان کرونا کی عالمی وبا کے باعث جاپان میں گزشتہ 11 سال کے مقابلے میں خودکشیوں کے بڑھتے ہوئے واقعات کی وجہ سے کیا گیا۔

جاپان کے وزیر اعظم نے سابق برطانوی وزیراعظم تھریسامے کی تقلید کی جنہوں نے سال 2018 میں اپنی ہی جان لینے والے افراد کی تعداد میں کمی کیلئے یہی وزارت قائم کی تھی۔

وزیرتنہائی تیتوشی ساکاماتو کی ذمہ داریوں میں جاپان میں پیدائش کی گھٹتی ہوئی شرح کا مقابلہ کرنے کے علاوہ علاقائی معیشتوں کو فروغ دینا بھی شامل ہے۔

وزرات سنبھالنے کے بعد افتتاحی پریس کرتے ہوئے وزیرتنہائی کا کہنا تھا کہ ان کی وزرات کو خواتین میں خودکشی کی بڑھتی ہوئی شرح کے معاملے سمیت قومی معاملات کی جانچ پڑتال کرنا ہوگی۔