کراچی میں بڑے حملے کی اطلاعات تھیں،عمر شاہد

دہشتگردوں کی شناخت پریس کانفرنس میں بتائیں گے

ڈی آئی جی سی ٹی ڈی عمر شاہد کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کی شناخت پریس کانفرنس میں ظاہر کی جائے گی، جو بڑے حملے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔

میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ 2 ہفتوں سے اس قسم کی اطلاعات موصول ہو رہی تھیں کہ دہشت گردوں کا منظم گروپ کراچی میں اترا ہوا ہے، جو بڑا حملہ کرنے کی منصوبہ بندی کرچکا ہے۔ حساس اداروں کیساتھ ملکر سی ٹی ڈی کی ٹیمیں دہشت گردوں کیخلاف کام کر رہی تھیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ عمر خطاب، شعیب قریشی سمیت اعلیٰ افسران اور ان کی ٹیمیں دہشت گردوں کو ٹریس کر رہے تھے۔ یہ ایک انٹیلی جنس بیس آپریشن تھا۔ اس سلسلے میں جو اہم اطلاعات آج رات کو ملی وہ بہت آہم تھیں، جس کی بنا پر آج ہی کارروائی کا فیصلہ ہوا۔ ابھی بالکل ابتدائی تفتیش ہے۔ میڈیا کو آج 3 بجے پریس کانفرنس میں تفصیلات سے آگاہ کریں گے۔

عمر شاہد یہ بھی بتایا کہ گرفتار دہشت گردوٕں کو تحقیقات کیلئے لے جایا جا رہا ہے۔ سی ٹی ڈی انچارج راجا عمر خطاب کا کہنا تھا کہ نیکٹا کی جانب سے کچھ عرصہ قبل الرٹ جاری کیا گیا تھا اور ہم کافی عرصے سے عمارت کی سرویلنس کر رہے تھے، پولیس مقابلے میں ہلاک اور گرفتار دہشتگردوں کی شناخت کا عمل اور مزید تحقیقات جاری ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کے زیر استعمال عمارت کو کلیئر کر دیا گیا ہے، جب کہ رکشے میں موجود دھماکا خیز مواد کو ناکارہ بنا دیا گیا ہے، رکشے میں بال بیئرنگ اور نٹ بولٹس کو مختلف خانوں میں چھپایا گیا تھا۔

KARACHI OPERATION

OMAR SHAHID

Tabool ads will show in this div