پہلے استعفے ہونگے یاتحریک عدم اعتماد، فیصلہ متحدہ اپوزیشن کریگی،مریم

فضل الرحمان کی زیرصدارت پی ڈی ایم کا اجلاس جاری

مریم نواز کہتی ہیں کہ پہلے استعفے ہونگے یا تحریک عدم اعتماد فیصلہ پی ڈی ایم کریگی۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ارکان کو ايوان پر اعتماد نہيں رہا۔

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے اسلام آباد میں اجلاس سے قبل میڈیا سے گفتگو میں مریم نواز شریف نے حکومت پر کڑی تنقید کی۔ ان کا کہنا تھا کہ حکمرانوں نے سینيٹ الیکشن میں خود ووٹ توڑے، اُس وقت ان کو اوپن بيلٹ کيوں ياد نہيں آيا۔

ایک صحافی کے سوال پر انہوں نے کہا کہ پہلے استعفے ہوں گے یا تحریک عدم اعتماد فيصلہ پی ڈی ایم کرے گی۔

مولانا فضل الرحمان کا صحافی کے سوال پر کہنا تھا کہ ارکان کو ايوان پر اعتماد نہيں رہا، آئينی ترميم اُس وقت لاتے جب سينيٹ کا چيئرمين بنوا رہے تھے۔

چیئرمین سینیٹ کے انتخابات 3 مارچ 2018ء کو ہوئے تھے، پاکستان پیپلزپارٹی اور پاکستان تحریک انصاف نے بلوچستان سے تعلق رکھنے والے صادق سنجرانی کی حمایت کی تھی جبکہ مسلم لیگ ن رضا ربانی کو چیئرمین سینیٹ کا امیدوار نامزد کرنا چاہتی تھی۔

پاکستان تحریک انصاف سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ سے کرانے کی خواہشمند ہے، ہارس ٹریڈنگ اور الیکشن میں پیسہ چلنے سے روکنے کیلئے حکومت نے سپریم کورٹ سے بھی رجوع کر رکھا ہے تاہم سیاسی جماعتیں اس حوالے سے ترمیم پر فی الحال متفق نہیں ہیں۔

IMRAN KHAN

MARYAM NAWAZ SHARIF

Pakistan Democratic Movement

PDM

Tabool ads will show in this div