جنوبی افریقی ٹیم کی 13 سال بعد پاکستان آمد

ٹیم کراچی میں قرنطینہ کریگی

جنوبی افریقی کرکٹ ٹیم 13 سال بعد پاکستان پہنچ گئی ہے، ٹیم کی قیادت کوئنٹن ڈی کوک کر رہے ہیں۔

جنوبی افریقی ٹیم چارٹرڈ فلائٹ کے ذریعے 16جنوری بروز ہفتہ کراچی پہنچی ہے۔ چارٹرڈ فلائٹ میں جنوبی افریقہ کا 38رکنی اسکواڈ شامل ہے۔ اس موقع پر ایئرپورٹ سے ہوٹل تک کے روڈ پر سیکیورٹی کے سخت انتطامات کیے گئے۔

کراچی آمد پر ٹیم کو سخت سیکیورٹی میں ایئر پورٹ سے ہوٹل پہنچایا گیا۔ ٹیم کی آمد سے قبل ہی فول پروف سیکورٹی پلان مرتب کرلیا گیا تھا۔ شہر میں 5 ہزار 714 اہلکاروں کو  سيکورٹی پر مامور کیا گیا ہے۔

ٹیم کے کراچی میں قیام کے دوران ٹریفک کی صورت حال کو رواں دواں رکھنے کیلئے 1ہزار 529 ٹریفک اہلکار ڈیوٹیاں انجام دیں گے۔

ٹیم پاکستان میں 2ٹیسٹ میچز اور 3 ون ڈے میچز کھیلے گی۔ پاکستان آمد پر ٹیم کراچی میں قرنطینہ کرے گی۔ جنوبی افریقی ٹیم کے کھلاڑیوں کے کرونا ٹیسٹ بھی کیے جائیں گے۔ ٹیسٹ کلیِئر کرنے والے کرکٹرز اتوار سے نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں ٹریننگ کا آغاز کرسکیں گے۔

جنوبی افریقی کرکٹ ٹیم پاکستان کیخلاف 2 ٹیسٹ اور 3 ٹی20 انٹرنیشنل میچز کھیلے گی، دونوں ٹیموں کے درمیان پہلا ٹیسٹ 26جنوری کو کراچی میں کھیلا جائے گا جبکہ دوسرا ٹیسٹ راولپنڈی میں 4 فروری سے شروع ہوگا۔ سیریز میں شامل دونوں ٹیسٹ میچز آئی سی سی ورلڈ ٹیسٹ چیمپیئن شپ کا حصہ ہوں گے۔

اسی طرح تین ٹی20 انٹرنیشنل میچوں پر مشتمل سیریز کے میچز قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلے جائیں گے۔ یہ میچز 11، 13 اور 14 فروری کو ہوں گے۔

واضح رہے کہ جنوبی افریقی کرکٹ ٹیم 13سال بعد پاکستان کا دورہ کررہی ہے، آخری مرتبہ جنوبی افریقا 2007 میں پاکستان آئی تھی تاہم دونوں ملکوں کے درمیان باہمی ہوتی رہی ہیں اور پاکستان نے جنوبی افریقا کی میزبانی متحدہ عرب امارات میں کی ہے۔

یاد رہے کہ سن1995 سے اب تک دونوں ممالک کے درمیان11ٹیسٹ سیریز کھیلی جاچکی ہیں۔ جس میں جنوبی افریقہ نے 7میں کامیابی حاصل کی جبکہ پاکستان صرف مصباح الحق کی قیادت میں صرف ایک سیریز میں کامیابی حاصل کر سکا ہے۔

جنوبی افریقہ کادورہ پاکستان، ٹیسٹ اسکواڈ کا اعلان

اس سے قبل گزشتہ روز ٹیسٹ سیریز کے لیے پاکستان کی ابتدائی 20 رکنی ٹیم کا اعلان کیا گیا تھا جس میں 8 نئے کھلاڑی شامل کیے گئے ہیں۔

PakvSA

Tabool ads will show in this div