ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا کیخلاف ریفرنس دائر

جعلی اکاؤنٹس کیس میں دیگر 6 افراد بھی نامزد

جعلی اکاؤنٹس اسکینڈل میں بڑی پیشرفت ہوگئی، نیب نے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا کیخلاف ریفرنس دائر کردیا۔ سابق ایم ڈی پی آئی اے اعجاز ہارون، ندیم مانڈوی والا اور عبدالغنی مجید کو بھی ملزم نامزد کردیا گیا۔

چیئرمین نیب کی ہدایت پر قومی احتساب بیورو نے جعلی اکاؤنٹس اسکینڈل میں گیارہواں ریفرنس دائر کردیا، جس میں ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا کو باقاعدہ ملزم نامزد کردیا، کیس میں جیالے سینیٹر کے بھائی ندیم مانڈوی والا، مبینہ بے نامی دار طارق محمود اور عبدالغنی مجید سمیت 7 ملزمان شامل ہیں۔

ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ اعجاز ہارون نے کڈنی ہلز فلک نُما میں پلاٹس کی بیک ڈیٹڈ فائلیں تیار کیں، سلیم مانڈوی والا نے پلاٹس عبدالغنی مجید کو فروخت کرنے میں اعجاز ہارون کی معاونت کی، حصے میں ملی رقم سےایک بے نامی پلاٹ خریدا، بعد میں وہی بیچ کر دوسرے فرنٹ مین کے نام پر بے نامی شیئرز خریدے۔

مزید جانیے: جام خان شورو کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری

دوسری جانب چیئرمین نیب نے ایگزیکٹو بورڈ میٹنگ میں سندھ کے سابق وزیر لوکل گورنمنٹ جام خان شورو کیخلاف سرکاری زمینوں پر قبضوں سے خزانے کو 5 ارب روپے نقصان پہنچانے سمیت 2 نئے ریفرنسز کی منظوری دے دی۔

نیب نے سابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال اور اویس مظفر ٹپی کیخلاف انکوائری بھی منظور کرلی گئی۔

Saleem Mandviwala

Tabool ads will show in this div