سرنڈر کرنا میرا نہیں، جنرل نیازی کا کام ہے، فضل الرحمان

ملاکنڈ میں جلسہ عام سے خطاب
Jan 11, 2021
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/01/FAZLU-ON-PAPA-JOHNS-PIZZA-SOT-11-01.mp4"][/video]

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم عمران خان کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ سرنڈر کرنا ان کا نہیں بلکہ جنرل نیازی کا شیوہ ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ دنوں ایک انٹرویو کے دوران کہا تھا کہ مولانا فضل الرحمان کو نیب کے سامنے سرنڈر کرنا ہوگا۔ گزشتہ روز بھی وزیراعظم نے مولانا فضل الرحمان پر طنز کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ پہلی اسمبلی ہے جو ڈیزل کے بغیر چل رہی ہے۔

ملاکنڈ کے علاقہ بٹ خیلہ میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ’ ایک دفعہ میرے بارے میں کہا کہ فضل الرحمان کو نیب کے سامنے سرنڈر ہونا پڑے گا۔ میں نے کہا سرنڈر ہونا مولانا فضل الرحمان کا کام نہیں، وہ جنرل نیازی کا کام ہے۔‘

تحریک انصاف کے خلاف 6 سال سے زیرالتوا فارن فنڈنگ کیس کا حوالہ دیتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تمہارا اقتدار اسرائیل اور ہندوستان سے آئے پیسوں سے چل رہا ہے اور تم کہتے ہو کہ میں محب وطن پاکستانی ہوں۔ آپ کے بارے میں جو ہم نے پہلے روز کہا تھا، اس کی روز بروز تصدیق ہورہی ہے۔

واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمان طویل عرصہ سے عمران خان پر یہودی ایجنٹ ہونے کا الزام عائد کر رہے ہیں۔ درمیان میں سیاسی اور مذہبی رہنماؤں کی مداخلت پر انہوں نے ’یہودی ایجنٹ‘ کہنا چھوڑ دیا مگر اب وہ جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے اشاروں کنایوں میں یہی الزام دہرا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے خلاف فارن فنڈنگ کیس کا تعاقب کرنے کیلئے 19 جنوری کو الیکشن کمیشن کے باہر احتجاج کریں گے اور 21 جنوری کو کراچی میں اسرائیل نامنظور ملین مارچ ہوگا۔

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے آج طویل پریس کانفرنس کی۔ اس دوران ایک صحافی نے ان سے پوچھا کہ فضل الرحمان کہتے ہیں وہ جی ایچ کیو کے سامنے مظاہرہ کریں گے۔ انہوں نے جواب دیا کہ وہ آئیں، انہیں چائے پانی پلائیں گے۔

مولانا فضل الرحمان اپنے خطاب میں اس کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ میں ان کوبتانا چاہتا ہوں کہ آپ خود تو پاپا جونز کے پیزے کھائیں اور ہمیں چائے پانی پر ٹرخائیں۔ یہ زیادتی ہے۔ یہ مہمانداری نہیں ہے۔

میجر جنرل بابر افتخار نے پریس کانفرنس کے دوران الیکشن میں دھاندلی سے متعلق سوال پر بتایا کہ پاک فوج نے دیانتداری سے انتخابات کروائے ہیں۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ’فوج کا الیکشن سے کیا کام ہے۔ اب آپ نے تسلیم کیا ہے کہ ہم نے کروائے ہیں تو دیانتداری سے نہیں بلکہ جانبداری سے کروائے ہیں اور دھاندلی کروائی ہے۔

IMRAN KHAN

FAZAL UR REHMAN

Tabool ads will show in this div