لاہور میں آئن لائن ٹیکسی ڈرائیور قتل

مقدمہ درج کرلیا گیا

لاہور میں نجی کمپنی کیلئے آئن لائن ٹیکسی چلانے والے ڈرائیور کو قتل کردیا گیا۔

پولیس کے مطابق لاہور میں آن لائن ٹیکسی سروس اوبر کیلئے کام کرنے والے 26 سالہ نوجوان ڈرائیور کو قتل کردیا گیا۔

اہل خانہ کی مدعیت میں درج مقدمے کے مطابق نوجوان کو پہلے اغوا کیا گیا اور بعد ازاں قتل کرکے لاش لاہور کے علاقے ساندہ میں پھینک دی گئی۔

پولیس کے مطابق حاصل شدہ ریکارڈ سے معلوم ہوا ہے کہ 26 سالہ نوجوان ڈرائیور نے گزشتہ رات 4 جنوری کو لاہور کے علاقے شالیمار سے کسی کسٹمر کی درخواست پر اپنی ٹیکسی بک کی تھی، تاہم چند گھنٹوں بعد لاش ساندہ کے علاقے سے ملی۔

قانون نافذ کرنے والے حکام کا مزید کہنا ہے کہ ملزمان مقتول کی گاڑی، موبائل اور رقم بھی ساتھ لے گئے۔ تاہم مکمل تفتيش کے بعد ہی تمام حقائق سامنے آئيں گے۔

مقتول کے ورثا نے شبہ ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ نوجوان کو ڈکیتی کے دوران قتل کیا گیا۔ مقتول شادی شدہ اور 2 سالہ بیٹی کا باپ تھا۔

اہل خانہ کی مدعیت میں ابتدا میں اغوا کا مقدمہ تھانہ شالیمار میں درج کیا گیا تھا، جس کے بعد اسی مقدمے میں قتل کی دفعات بھی شامل کرلی گئی ہیں۔

PUNJAB

ONLINE TAXI

Tabool ads will show in this div