خاتون کا شناختی کارڈ بلاک کرنا نادرا کو مہنگا پڑگیا

عدالت نے والد پر بھی جرمانہ عائد کردیا
Jan 02, 2021
[caption id="attachment_2095291" align="alignnone" width="800"] فوٹو: ٹوئٹر[/caption]

خاتون شہری کا شناختی کارڈ بلاک کرنے پر اسلام آباد ہائيکورٹ نے نادرا اور خاتون کے والد پر پانچ پانچ لاکھ روپے ہرجانہ عائد کر دیا۔

ایک خاتون عروج تابانی نے عدالت کو درخواست دی تھی کہ گھریلو جھگڑے کے سبب ان کے والد یقوب تابانی نے انہیں بیٹی ماننے سے انکار کرتے ہوئے نادرہ کے ذریعے ان کا قومی شناختی کارڈ بلاک کردیا جس کے باعث وہ مشکلات اور ذہنی اذیت کا شکار ہوئیں۔

عدالت نے گھریلو جھگڑوں پر نادرا سے شناختی کارڈ بلاک کرنے کے اختیار کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا کہ نادرا کو کوئی اختیار نہیں کہ وہ خاندانی جھگڑوں میں مداخلت کرے۔

عدالت نے قرار دیا کہ عروج تابانی کو شناختی کارڈ بلاک ہونے پر ازیت اور کرب سے گزرنا پڑا لہٰذا نادرا اور یعقوب تابانی 30دن کے اندر پانچ پانچ لاکھ روپے عدالت میں جمع کرائیں جو عدالتی کارروائی کے اخراجات کی مد میں عروج تابانی کو دیئے جائیں گے۔

NADRA

Tabool ads will show in this div