وزیراعظم نے تعمیراتی شعبے کے ریلیف میں توسیع کردی

اب تک 186 ارب کے منصوبے رجسٹرڈ ہوچکے
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/12/Ptv-Pm-Imran-Talk-Construction-Industry-31-12.mp4"][/video]

وزیراعظم عمران خان نے تعمیراتی صنعت کو دیے گئے ریلیف پیکج میں ایک سال کی توسیع کردی ہے۔

جمعرات کو قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ تعمیراتی سیکٹر کیلئے فکسڈ ٹیکس ریجیم میں 31 دسمبر 2021 تک توسیع کردی گئی ہے۔ بلڈرز سے 30 جون 2021 سے سرمایہ کاری کرنے پر پیسوں کے ذرائع نہیں پوچھے جائیں گے جبکہ گھر خریدنے والے افراد سے 31 مارچ 2023 تک ذرائع آمدن کے بارے میں نہیں پوچھا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سستے گھروں کا منصوبہ شروع کیا ہے اور اس مد میں سبسڈی کیلئے 30 ارب روپے مختص کیے ہیں۔ پہلے ایک لاکھ گھروں کیلئے حکومت 3 لاکھ روپے گرانٹ دے گی۔ عمران خان نے کہا کہ تعمیراتی سیکٹر کو ریلیف دینے سے اب تک ایف بی آر کے پاس 186 ارب کے منصوبے رجسٹرڈ ہوچکے ہیں۔ تعمیراتی شعبے کا مطالبہ تھا کہ وقت کم دیا گیا ہے۔ ان کا مطالبہ پورا کرتے ہوئے اس پیکج میں توسیع کردی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے تمام بڑے شہروں کے ماسٹر پلان دوبارہ بنائے جائیں گے تاکہ لوگوں کو سیوریج، پانی سمیت دیگر سہولیات دستیاب ہوں اور زرعی اراضی کو محفوظ کیا جاسکے۔ وزیراعظم نے کہا کہ لینڈ ریکارڈ ڈیجیٹائز نہ ہونے کے باعث عدالتیں مقدمات سے بھری ہیں۔ اراضی کے تنازعات روز بروز بڑھ رہے ہیں۔ اس لیے کراچی، لاہور اور اسلام آباد میں اگست تک ساری زمینیں ڈیجیٹائز ہوں گی۔ اس کے نتیجے میں اداروں کی ملکیت اراضی کی بھی نشاندہی ہوجائے گی جس کا وہ بہتر استعمال کرسکیں گے۔ سابق چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے وزیراعظم کے اقدام کو درست قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں بے تحاشا پیسہ سسٹم سے باہر بڑا ہے۔ اس پیکج سے وہ پیسہ سسٹم میں آجائے گا اور یہ سرمایہ کاری 2 ہزار ارب تک جاسکتی ہے۔ ماہر معاشیات مزمل اسلم نے اس کو حوصلہ افزا قرار دیا مگر شبر زیدی کی پیش گوئی کو ناممکن قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی پیداواری صلاحیت کم ہے۔ سیمینٹ فیکٹریاں اتنا سیمیٹ ہی بناسکتی ہیں جو اس وقت بن رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سارے منظرنامے میں سب سے اہم چیز روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ ہے، اس کے ذریعے بیرون ملک سے اوورسیز پاکستانی پاکستان میں رقم بھیجیں گے۔

IMRAN KHAN

CONSTRUCTION INDUSTRY

Tabool ads will show in this div