کرونا کی حالیہ لہر:سعودی عرب میں بین الاقوامی پروازیں معطل

پابندیوں میں ایک ہفتے کی مزید توسیع کی جاسکتی ہے
Dec 21, 2020
فوٹو: اے ایف پی
فوٹو: اے ایف پی
[caption id="attachment_2134434" align="alignnone" width="800"]Saudi flights فوٹو: اے ایف پی[/caption]

کرونا وائرس کی حاليہ لہر کے باعث سعودی عرب نے نئی پابندياں نافذ کرتے ہوئے بین الاقوامی پروازیں ایک ہفتے کے لیے معطل کر دی۔

عرب ميڈيا کے مطابق يورپ اور برطانيہ ميں کرونا کی لہر ميں اضافے کے باعث ايک ہفتے کے لیے پروازيں معطل کی گئيں۔ پابنديوں ميں ايک ہفتے کی مزيد توسيع کی جا سکتی ہے۔

زمينی يا بحری راستوں سے بھی سعودی عرب ميں داخلے کی اجازت نہيں ہوگی۔ البتہ مخصوص حالات ميں پروازوں کو خصوصی اجازت دی جا سکے گی۔

يورپی ممالک سے آنے والوں کو 2 ہفتے تک قرنطينہ ميں رکھا جائے گا اور ہر پانچ دن بعد کرونا ٹيسٹ ليا جائے گا۔

گزشتہ تين ماہ ميں يورپی يا ہائی رسک ممالک سے آںے والوں کو بھی کرونا ٹيسٹ کرانا ہوگا۔ کھانے پينے کی اور ضروری اشياء کو لانے کی اجازت ہوگی۔

واضح رہے کہ لندن میں کرونا وائرس کی نئی قسم سامنے آنے کے بعد فرانس، جرمنی، اٹلی، آئرلینڈ، کینیڈا، نیدرلینڈز، بیلجیم، آسٹریا، سویڈن، فن لینڈ، سوئٹزرلینڈ، بالٹیکس، بلغاریہ، رومانیہ، کروشیا، ترکی، ایران، اسرائیل، سعودی عرب، کویت، ال سلواڈور، ارجنٹائن اور چلی نے برطانیہ سے آنے والی پروازوں پر پابندی عائد کردی۔

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن آج ایمرجنسی ریسپانس میٹنگ اجلاس کی صدارت کریں گے جس مین بین الاقوامی سفر، خاص طور پر برطانیہ سے باہر جانے اور آنے والے مسافروں کے بارے میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

Tabool ads will show in this div