بختاورکی منگنی کی شال میں کیا خاص تھا

انسٹاپوسٹ میں بختاورنے مداحوں کو تفصیل بتائی
Dec 19, 2020
[caption id="attachment_2133019" align="alignnone" width="800"] کولاج: سماء ڈیجیٹل[/caption]

گزشتہ ماہ 27 نومبر کو منگنی کے بندھن میں بندھنے والی بختاور بھٹوزرداری نے اس موقع پر جو شال زیب تن کی، وہ بہت خاص تھی کیونکہ اس ایک شال میں فیملی کے ساتھ بختاورکے ماضی سے لیکر حال تک کوبھرپور طریقے سے سمیٹا گیا تھا۔

منگنی کی ویڈیوز اور تصاویر شیئرکرنے والی بختاور اس بارانسٹاگرام پر اس خاص شال کے حوالے سے تفصیلات بتا رہی ہیں۔

فالوورز کیلئے شال کی قریب سے لی جانے والی تصاویرشیئرکرتے ہوئے بختاور نے بتایا کہ یہ فیشن ڈیزائنر ندا ازور اور ان کی ٹیم نے تیارکی، اورمیں ہمیشہ سے چاہتی تھی کہ میری والدہ بینظیربھٹوبھی اس خاص لمحے کا حصہ ہوں۔

انہوں نے پوسٹ میں واضح کیا کہ "اس شال کا ڈیزائن 3 چیپٹرز میں تقسیم کیا ہے، ایک جانب تصاویر اور فیملی سمیت بختاور کے اسلام آباد میں گزارے گئَے بچپن کے لمحات کو اجاگرکیا گیا ہے جبکہ دوسری جانب ایک منظر میں دولہا کو منگنی کی انگوٹھی سمیت آتے دیکھا جاسکتا ہے اور منگنی کے ایونٹ کی تیاریاں جاری ہیں"۔

شال کے درمیانی حصہ میں آسمان ،سورج اور اڑتے پرندوں کو دیکھا جاسکتا ہے۔

بختاور نےایک مختصرویڈیو بھی شیئر کی جس میں وہ اپنے والد آصف علی زرداری کو اس شال سے متعلق بتا رہی ہیں ۔

بختاور نے مزید بتایا کہ شال پرانی مغل پینٹنگز سے متاثرہوکربنوائی گئی ہے۔ لیکن ہم نے روزمرہ زندگی کو تفریح سے بھرپور دکھایا ہے۔ ایک جانب دولہا مکمل تیار نظرآرہا ہے تو دوسری جانب دلہن اپنے موباِئل فون پر انسٹا گرام اور موسیقی میں مصروف ہے۔

بختاور کے منگیترکاشاعرانہ اظہار پسندیدگی

اس پوسٹ کے ساتھ شیئرکی جانے والی تصویر میں بھی یہ منظر نمایاں ہے۔

جنوری 1990 میں جنم لینے والی بختاور بھٹوزرداری، بینظیر بھٹو اور آصف زرداری کے 3 بچوں میں سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ چیئرمین پی پی بلاول بھٹو زرداری ان سے 2 سال بڑے ہیں، جب کہ فروری 1993 میں پیدا ہونے والی آصفہ سب سے چھوٹی ہیں۔

انگلینڈ کی یونیورسٹی آف ایڈنبرگ سے انگلش میں ماسٹرز آنرز کی ڈگری لینے والی بختاور تعلیم کے فروغ کیلئے زیبسٹ یونیورسٹی کے ساتھ کام کر رہی ہیں۔

بختاور بھٹو کا اپنی منگنی کی انگوٹھی سے متعلق دلچسپ انکشاف

پی پی میڈیا سیل کے مطابق محمود چوہدری کے والدین محمد یونس اور والدہ ثریا بیگم کا تعلق پرانے لاہور سے ہے، جو 1973 میں متحدہ عرب امارات منتقل ہوگئے تھے اور سخت محنت کے بعد تعمیرات اور ٹرانسپورٹ انڈسٹری میں اپنے کاروبارکی بنیاد رکھی۔

محمود چوہدری 5 بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹے ہیں۔ ان کی پیدائش 28 جولائی 1988 کو ابوظہبی میں ہوئی اور وہیں سے ابتدائی تعلیم مکمل کرنے کے بعد وہ سیکنڈری اسکولنگ کیلئے برطانیہ چلے گئے۔ محمود چوہدری نے یونیورسٹی آف درہم سے قانون کی تعلیم حاصل کی ہے۔

ASIF ALI ZARDARI

Shawl

Bakhtawar Bhutto Zardari

MAHMOOD CHOUDHRY