محمدعامر کا کرکٹ چھوڑنےکا اعلان

ہربات پرمجھ پرطنز کيا جاتا ہے

فاسٹ بالرمحمد عامر نے کرکٹ سے کنارہ کشی کا فیصلہ کیا ہے۔انھوں نے کہا ہے کہ موجودہ منجمنٹ کے ساتھ کرکٹ نہیں کھیل سکتا،ریٹائرمنٹ کا باقاعدہ اعلان چند روز میں کروں گا۔

سماء سےخصوصی بات کرتےہوئے محمدعامر نےکہا کہ موجودہ منجمنٹ کے تحت کرکٹ نہيں کھيل سکتا،ذہنی طور پر ٹارچر کيا جارہا ہے اورسائيڈ لائن کيا گيا ہے۔

محمد عامر نے کہا کہ اتنا ٹارچربرداشت نہيں کرسکتا اورہربات پرمجھ پرطنز کيا جاتا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ کبھی بالنگ کوچ کہتے ہيں کہ عامر دھوکا دے گيا تو کبھی یہ مشہور کيا کہ ميں ملک سے نہيں کھيلنا چاہتا،ملک سے کون نہیں کھیلنا چاہتا،لیگ سے ہی واپسی ہوئی تھی اور پاکستان سے کھیلنےکی ہمیشہ خواہش تھی۔

انھوں نے کہا کہ کرکٹ سے دور نہیں ہوسکتا،لیکن کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،جیسا ماحول ہے،اس میں کرکٹ نہیں کھیل سکتا۔ انھوں نے مزید بتایا کہ جب نیوزی لینڈ کے دورے کےلیے 35 کھلاڑیوں میں شامل نہیں کیا گیا تھا تو اندازہ ہوگیا تھا کہ مستقبل کے فیصلے کروں۔

محمد عامرکا کہنا تھا کہ اس وقت کرکٹ چھوڑ رہا ہوں،سال 2010 سے 2015 تک بہت ٹارچر سہا ہے اور سزا کاٹ چکا ہوں،لوگ باربارکہتےرہےکہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے عامر پر بہت انویسٹ کیا۔

انھوں نےمزید وضاحت دی کہ 5 برس قبل کرکٹ میں واپسی کے وقت پاکستان کرکٹ بورڈ کے سابق چئیرمین نجم سیٹھی اور سابق کپتان شاہد آفریدی نے بہت سپورٹ کیا،اس وقت باقی ٹیم کا کہنا تھا کہ محمد عامر کے ساتھ نہیں کھیلنا چاہتے۔انھوں نے کہا کہ ٹیسٹ کرکٹ سے کنارہ کشی ذاتی فیصلہ تھا،اس کو غلط رخ دیا گیا،محمد عامر نے مزید کہا کہ 2 دن ميں ساری تفصيلات سےآگاہ کروں گا۔

مزیدپڑھیں:ٹیم میں واپسی کی امیدیں چھوڑدیں،محمدعامر

محمد عامر کے فیصلے پر سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا ہے کہ محمد عامر کا کرکٹ چھوڑنے کا فیصلہ حیران کن رہا ہے، چیلنجز آتے ہیں،لیکن ایسا فیصلہ نہیں کرنا چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ جب آپ کے پاس آگے وقت ہو تو کسی کے باتوں میں آکر ریٹائرمنٹ نہیں لینا چاہئے۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ محمد عامر سے بات ہوئی ہے،ان کو کہا ہے کہ دل چھوٹا نہیں کرنا چاہئے۔

سابق کپتان انضمام الحق نے کہا کہ محمدعامر کا کرکٹ چھوڑنے کا فیصلہ پاکستان کرکٹ کے لیے اچھا نہیں ہے،محمد عامر بڑا کھلاڑی ہے،اس کو بورڈ سے جاکر بات کرنا چاہئے تھی،منجمنٹ کوبھی چاہئے تھا کہ محمدعامر کو ڈراپ کرنےسے پہلے بات کرتے۔

وقار یونس سےمتعلق شاہد آفریدی نے کہا کہ کرکٹ بورڈ ہمیشہ باپ کا کردار ادا کرتا ہے،تاہم ہمارے کلچر میں یہ ہے نہیں،بورڈ کو اپنا پلان کھلاڑیوں کو بتانا چاہئے،بورڈ کی کوشش ہوتی ہے کہ صرف نئے لڑکے کو چانس دیں۔

Tabool ads will show in this div