سینئر صحافی طارق محمود انتقال کرگئے

وہ اخبارات اور ٹی وی سے وابستہ رہے

سینیر صحافی طارق محمود اسلام آباد میں انتقال کرگئے۔

طارق محمود کو ایک ماہ قبل کرونا وائرس کی تشخیص کی گئی تھی اور کئی روز سے اسپتال میں زیر علاج تھے اور ان کی حالت تشویش ناک تھی۔ طارق محمود کو طبیعت خراب ہونے اور سانس کی تکلیف کے باعث اسلام آباد کے اسپتال میں منتقل کیا گیا تھا۔

سینیر صحافی طارق محمود مختلف اخبارات کے علاوہ اے آر وائی نیوز، نیو ٹی وی، سما ٹی وی، اور بعد ازاں ہم نیوز سے وابستہ رہے۔ نفیس مزاج، ملنسار اور ہر دل عزیز انسان طارق محمود کی وفات پر صحافی برادری کی جانب سے بھی دکھ اور غم کا اظہار کیا گیا ہے۔

وہ وزارت دفاع اور خارجہ امور کی اہم بیٹس کو کور کیا کرتے تھے۔ مرحوم کے بیٹے کے مطابق طارق محمود ملک کا آخری کرونا ٹیسٹ منفی آیا تھا، تاہم پھیپھڑوں میں انفیکشن کے باعث گزشتہ شب انتقال کرگئے۔ مرحوم کا تعلق تلہ گنگ سے تھا۔

طارق محمود کے انتقال پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی جانب سے بھی افسوس کا اظہار کیا گیا ہے۔ شاہ محمود کا کہنا تھا کہ طارق محمود ملک ایک زیرک اور منجھے ہوئے رپورٹر تھے۔ اللہ رب العزت مرحوم کی مغفرت اور درجات بلند فرمائیں اور اہل خانہ کو صبر جمیل عطا فرمائے۔ دکھ کی اس گھڑی میں اہم طارق محمود ملک کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل 14 نومبر کو جیو ٹی وی سے وابستہ سینیر صحافی ارشد وحید چوہدری بھی کرونا کے باعث انتقال کرگئے تھے۔ ارشد وحید چوہدری نیشنل پریس کلب کے سینیر نائب صدر بھی تھے۔

گزشتہ ماہ 12 نومبر کو چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ علالت کے باعث انتقال کرگئے تھے، اسی روز سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف بھی کرونا وائرس میں مبتلا ہوئے۔ راجہ پرویز اشرف کے کوویڈ 19 میں مبتلا ہونے کی تصدیق ان کے صاحبزادے نے ٹوئٹ کے ذریعے کی، جو بعد ازاں کرونا وبا کو شکست دینے میں کامیاب ہوئے۔

گزشتہ ماہ کی 12 تاریخ کو ہی سابق چیئرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل کا کرونا ٹیسٹ مثبت آیا۔

واضح رہے کہ پاکستان میں جان لیوا کرونا وائرس کی دوسری لہر اب تک ہزاروں افراد کو اپنی لپیٹ میں لے چکی ہے، جن میں ملک کی نامور سیاسی، سماجی و شوبز شخصیات بھی شامل ہیں۔

JOURNALIST

TARIQ MEHMOOD

CORONA

Tabool ads will show in this div