مفتی زرولی کی نماز جنازہ ادا، ہزاروں افراد کی شرکت

گلشن اقبال کیساتھ قریبی گلیاں بھی بھر گئیں

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/12/Zar-Wali-Janaza-KHI-PKG-08-12-REms.mp4"][/video]

معروف عالم دین مفتی زر ولی خان کی نماز جنازہ ادا کردی گئی، جس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی، گلشن اقبال کے گراؤنڈ کے ساتھ ساتھ قریبی گلیاں بھی معتقدین سے بھر گئیں۔

دين کی تبليغ اور درس و تدریس سے وابستہ ملک کے معروف عالم دین مفتی زر ولی خان کی نماز جنازہ گلشن اقبال بلاک 2 کے گراؤنڈ میں ادا کی گئی، اس موقع پر اطراف کی سڑکيں اور گلياں بھی معتقدین سے بھر گئيں، جدھر نگاہ گئی سَر ہی سَر نظر آئے، عظيم رہبر و استاد کی وفات پر رفقاء اور طلبا افسردہ نظر آئے۔

معروف عالم دین کی نماز جنازہ میں شریک افراد کا کہنا تھا کہ مفتی زر ولی خان کا خلا شايد ہی کبھی پُر ہوسکے۔

مفتی زر ولی کی نمازجنازہ ان کے بيٹے مولانا انور شاہ نے پڑھائی، وہ 1953ء میں پشاور کے ضلع صوابی ميں پيدا ہوئے، پوری زندگی درس و تدريس سے جڑے رہے، مفتی زر ولی دینی درسگاہ احسن العلوم کے بانی تھے۔

مفتی زر ولی سينکڑوں علماء کے استاد، کئی کتابوں کے مصنف اور ايک بہترين خطيب بھی تھے۔ پاکستان ہی نہيں ديگر ملکوں سے بھی ہر سال سیکڑوں طلبا اُن سے درس تفسير پڑھنے آتے تھے۔

مفتی زر ولی پیر کی رات کراچی کے نجی اسپتال میں 67 سال کی عمر میں انتقال کرگئے تھے۔

Tabool ads will show in this div