پاکستان سعودیہ کادہشتگردی کیخلاف مشترکاحکمت عملی اپنانےکااعلان

000-111957441446637012427 ریاض/ راول پنڈی : آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے ایک بار پھر اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ حرمین شریفین اور سعودی جغرافیائی حدود کا ہر حال میں تحفظ کیا جائے گا، جب کہ سعودی فرماںراں سے ملاقات میں دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف مشترکا حکمت عملی اور مکینزم بنانے کا بھی اعلان کیا گیا۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے سعودی فرمانروا شاہ سلمان سے ملاقات کی، جب کہ آرمی چیف نے سعودی ولی عہد اور وزیر دفاع سے بھی علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کیں، ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور دو طرفہ دفاعی تعاون پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ 000-111957441446637012427 اس موقع پر آرمی چیف نے ایک بار پھر اس بات کا اعادہ کیا کہ حرمین شریفین اور سعودی جغرافیائی حدود کا ہر حال میں تحفظ کیا جائے گا، پاکستان اور سعودی عرب علاقائی استحکام میں اہم شراکت دار ہیں۔ اس موقع پر سعودی فرمانروا کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سلامتی کو کوئی بھی خطرہ قابل قبول نہیں، پاکستان میں امن اور استحکام کیلئے ہر ممکن مدد دی جائیگی، سعودی فرمانروا کا مزید کہنا تھا کہ پاک فوج اقوام عالم کی افواج میں نمایاں مقام رکھتی ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاک فوج کی قربانیاں قابل قدر ہیں۔ دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں فریقین نے دہشت گردی کی لعنت کو مشترکا کوششوں سے ختم کرنے پر بھی زور دیا، جب کہ شدت پسندی کے خاتمے کیلئے مشترکا حکمت عملی اپنانے پر بھی غور کیا گیا، جب کہ انتہا پسندی کے خاتمہ کیلئے میکنزم قائم کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا۔ CS97yRaWUAAoKH8 سعودی قیادت نے پاک فوج سے متعلق اپنے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور پاک فوج کو انتہائی عزت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، پاک فوج کی آپریشن ضرب عضب میں کامیابیوں کو سراہتے ہیں۔ سماء

RAHEEL SHARIF

ZARBEAZB

terrorists

TALIBAN

SAUDIA ARABIA

JOINT OPERATION

training

Crown Prince

SAUDI KING

Tabool ads will show in this div