پی ڈی ایم ملتان جلسہ، منتظمین کیخلاف مقدمہ درج کرانیکافیصلہ

سب کچھ منصوبہ بندی سے کیا گیا، فردوس عاشق اعوان

پنجاب حکومت نے کل ملتان ميں جلسہ کرنے والوں کے خلاف مقدمہ درج کرانے کا اعلان کرديا۔ صوبائی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کہتی ہيں کہ سب کچھ منصوبہ بندی سے کيا گيا، آگ سابق لیگی رکن صوبائی اسمبلی کی آتش بازی کی وجہ سے لگی۔

صوبائی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان نے ملتان میں حلوہ اور جلوہ اکٹھے دکھايا، کارکنوں کو پوليس کو لہولہان کرنے کی ہدايات ديں ليکن ہم نے ہوش سے کام ليتے ہوئے اپوزيشن کی سازش مليا ميٹ کردی، دوسرے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی کوشش کی گئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب حکومت نے ملتان جلسہ کرنیوالوں کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ کیا ہے، ن ليگ کے 22، پی پی کے 16 اور جے يو آئی ف کے 13 لوگ شامل ہیں، کچھ نامعلوم افراد کیخلاف بھی مقدمہ کيا جائے گا۔

فردوس عاشق اعوان نے دعویٰ کیا کہ سابق ن لیگی رکن صوبائی اسمبلی شاہد کی آتش بازی وجہ سے قریبی گودام میں آگ لگی، کارکنوں کی جانب سے تالے توڑے گئے، بلوہ کيا گيا، پوليس کو مارا پيٹا گيا، سرکاری املاک کو نقصان پہنچايا گيا۔

FIRDOUS ASHIQ AWAN

Pakistan Democratic Movement

Tabool ads will show in this div