ملک کامستقبل عدلیہ کی آزادی،قانون کی بالادستی میں ہے،چیف جسٹس

Cj Senate Speech Ptv 03-11 اسلام آباد : چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس انور ظہیر جمالی کا کہنا ہے کہ بدعنوانی کلچر لاقانونیت کے فروغ کا باعث بن رہا ہے، منتخب نمائندے عوام کو جوابدہ ہیں، سرکاری پالیسیوں کو قانون کی حدود کے اندر رکھنا ہوگا۔ ملکی تاریخ میں پہلی بار پارلیمنٹ ہاؤس میں سینیٹ کی عدالتی اصلاحات کمیٹی سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے کہا کہ  قانون کی بالادستی ایک ناگزیر ضرورت ہے، ریاست پاکستان کا تمام ڈھانچہ اورمنتخب نمائندے عوام کو جوابدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں قوانین پر عملدرآمد کے سلسلے میں بحران کا سامنا ہے، انصاف کی فراہمی کیلئے ادا کی جانے والی خدمات کا معیار غیرتسلی بخش ہے، بدعنوانی کا کلچر لاقانونیت کے فروغ کا باعث بنتا ہے۔ انہوں نے کہا آئین میں ریاستی اداروں کے درمیان اختیارات کی تقسیم واضح ہے، اداروں کو اس پر عمل کرنا ہوگا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ غیر منصفانہ معاشرہ اور ریاست زیادہ دیر قائم نہیں رہ سکتے، ریاست کے باشندوں کو نظر آنا چاہیے کہ قانون سے کوئی بالاتر نہیں۔ سماء

SENATE

country

address

RAZA RABBANI

STATE

chief justice of pakistan

parliament house

INSTITUTION

Tabool ads will show in this div