تہرے قتل میں مفرور ملزم گرفتار کرلیا، دادو پولیس

سرداروں نے خود پیش کیا، مرکزی ملزم فرارہے، ام رباب

دادو پولیس نے اُم رباب کے والد، بھائی اور چچا کے قتل کیس ميں مفرور ملزم ذوالفقار چانڈیو کی گرفتارئ کا دعویٰ کيا ہے جبکہ اُم رباب کا کہنا ہے کہ پوليس نے ملزم کو گرفتار نہيں کيا بلکہ سرداروں نے پيش کرايا ہے۔

ایس پی فرخ رضا کے مطابق دادو میں تہرے قتل کے جرم میں مفرور ملزم ذوالفقار چانڈيو کو کشمور سے گرفتار کرلیا گیا۔

ملزم کی گرفتاری کیلئے گزشتہ ماہ ارکان سندھ اسمبلی سردار خان چانڈیو اور برہان خان چانڈیو کے گھروں پر چھاپے مارے گئے تھے۔

ام رباب نے سماء کے پروگرام 7 سے 8 ميں گفتگو کرتے ہوئے پولیس کے دعوے کو غلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ ملزم کو گرفتار نہیں کیا گیا بلکہ سرداروں نے خود اسے پيش کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ خاندان کے تین مردوں کے قتل کا مرکزی ملزم مرتضیٰ چانڈيو اب بھی مفرور ہے۔

دادو کی تحصیل میہڑ میں تقریباً 3 سال قبل ام رباب چانڈیو کے والد، بھائی اور اور چچا کو قتل کردیا گیا تھا۔

Umme Rubab

Tabool ads will show in this div