کوئٹہ:درجہ حرارت گرنے سے گیس کی قلت، شہری پریشان

شہریوں کے معمولات منجمد
Nov 25, 2020

کوئٹہ کے شہری منفی 2 ڈگری سینٹی گریڈ درجہ حرارت کے باوجود گیس کی سہولت سے محروم ہیں۔ شہر کے بیشتر علاقے گیس لوڈشیڈنگ اور پریشر میں کمی کے مسئلے سے دوچار ہیں۔

گزشتہ روز کوئٹہ میں ہونے والی برسات کے بعد وادی میں یخ بستہ ہواؤں کا راج ہے۔موسم کےتیور بدلنے کے ساتھ منفی 2 ڈگری سینٹی گریڈنے شہریوں کے معمولات منجمد کردئیے ہیں۔ سردی کے باوجوداہلیان کوئٹہ سوئی گیس کی سہولت سے محروم ہیں۔کاسی روڈ، شالدرہ،میکانگی روڈ، سریاب اور دیگر علاقوں کے مکین گیس لوڈ شیڈنگ سے شدید پریشان ہیں۔

گیس نایاب ہوتے ہی  شہریوں نے ایل پی جی کا سہارا لینا شرو ع کردیا۔ڈیمانڈ بڑھنے کے ساتھ ہی 110روپے فی کلو ایل پی جی کی قیمت 140روپے تک جا پہنچی ہے۔ دکانداروں کا کہنا ہے کہ ایل پی جی کی قیمتوں میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے کیوں کہ گیس پلانٹ کم ہونے کی وجہ سے قلت پیدا ہوگئی ہے۔

شہریوں نےحکومت سے مطالبہ کیا کہ سرد موسم میں گیس کی ترسیل یقینی بنائی جائے تاکہ ان کی پریشانی کم ہو سکے۔

Tabool ads will show in this div