وزیراعظم نے حساس اداروں کومتنازعہ بنانےکی کوشش کی، احسن اقبال

عمران خان کا خطاب نہایت غیر ذمہ دارانہ تھا

مسلم لیگ ن کے رہنماء احسن اقبال کہتے ہیں کہ آج وزیراعظم کا خطاب نہایت غیر ذمہ دارانہ تھا کیونکہ عمران خان نے تقریر میں 2 حساس اداروں کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی۔

ایاز صادق کے بیان سے متعلق سماء کے پروگرام سوال میں گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی ہے کہ جو اپوزیشن کے ساتھ ہو رہا ہے اس میں یہ دو عہدے بھی شامل ہیں۔

لیگی رہنماء نے کہا کہ ایاز صادق اپنے مؤقف کی وضاحت کرچکے ہیں اور انہوں نے واضح طور پر کہا کہ ان کا نشانہ وزیر خارجہ تھے۔ ایاز صادق کا نشانہ افواج پاکستان نہیں تھی۔

انہوں نے کہا کہ ایاز صادق نے قومی اداروں اور قومی سلامتی کو نشانہ نہیں بنایا بلکہ انہوں نے نااہل وزیر خارجہ اور نااہل وزیراعظم کو نشانہ بنایا۔ یہ تاثر دینا ہم دفاعی اداروں کو کمزور کرنا چاہتے ہیں یہ مذاق ہے کیونکہ مسلح افواج کو جتنا مضبوط ہم نے کیا اس کی مثال نہیں ملتی۔

احسن اقبال نے کہا کہ ایاز صادق کا نشانہ وزیر خارجہ تھے اس کا افواج سے کوئی تعلق نہیں۔ جب اس حکومت کے پاس کوئی جواب نہیں ہے تو اب یہ چاہتے ہیں کہ قومی اداروں کو ڈھال بنا کر ان کے پیچھے چھپیں اور اپوزیشن کی لڑائی کرائیں۔

انہوں نے کہا کہ ایاز صادق کا بیانیہ نالائق اور ناکام حکومت کے وزیر خارجہ کے خلاف ہے جو ہر ہفتے ملتان میں تقریر کر کے سمجھتے تھے کشمیر جیت لیا۔ یہ بیانیہ پاکستان کے خلاف نہیں پاکستان کو مضبوط کرنے کا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ یہ اداروں اور اپوزیشن کی لڑائی کرانا چاہتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ قومی اداروں کو ڈھال بنا کر ان کے پیچھے چھپ جائیں۔ اس حکومت کے پاس مہنگائی کا جواب نہیں ہے، یہ حکومت ہر لحاظ سے پٹ چکی ہے۔

منصب ڈوگر کے پارٹی چھوڑنے سے متعلق لیگی رہنماء نے کہا کہ منصب ڈوگر آزاد الیکشن لڑ کر آئے تھے اور 2018 میں پارٹی چھوڑ گئے تھے۔

AYAZ SADIQ

Tabool ads will show in this div