ایاز صادق کسی اور کی زبان بول رہے، اعتزاز احسن

نواز شریف کا مؤقف اب والا نہیں

Aitzaz Ahsan Interview Isb EX 01-11

پیپلزپارٹی کے سینیئر رہنما اعتزاز احسن کا کہنا ہے کہ سابق اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کا لہجہ بتا رہا ہے کہ وہ کسی اور کی زبان بول رہے ہیں۔

سماء کے نمائندہ خصوصی عباس شبیر کو انٹرویو میں اعتزاز احسن نے کہا کہ ایاز صادق کی گفتگو نواز شریف جیسی لگتی ہے اور ایاز صادق کے بیان کے پیچھے محرک کوئی اور ہے۔

انہوں نے کہا کہ محمد زبیر کی ملاقات سے پہلے نواز شریف کا مؤقف اب والا نہیں تھا کیونکہ نواز شریف اس وقت نام لے لے کر للکار رہا ہے۔ پی پی رہنماء نے کہا کہ میاں نواز شریف کی بیان بازی کا پہلا مقصد مریم نواز کو لندن بلوانا اور دوسرا مقصد اپنی دولت بچانا ہے۔

اعتزاز احسن نے کہا کہ شہباز شریف کا درخواست ضمانت واپس لینا ظاہر کرتا ہے کہ وہ اپنی گیم کھیل رہے ہیں۔

ایاز صادق کے بیان سے متعلق رہنماء پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ پاکستان کا مؤقف ہے کہ ہم نے ابھی نندن کو جہاز سمیت گرایا اور بھارتی پائلٹ کواقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق واپس بھیجا گیا۔ اگر ہمارے مؤقف میں ڈھیل آئے گی تو ملک کو نقصان ہوگا۔

اعتزاز احسن کے بیان پر پيپلزپارٹی کی نفيسہ شاہ متفق نہيں۔ نفیسہ شاہ کہتی ہیں کہ اعتزاز احسن ہمارے رہنما ہيں مگر کئی بار وہ اپنی رائے پارٹی سے عليحدہ رکھتے ہيں۔

ن ليگ کے رانا تنوير نے اعتزاز احسن کے بيان کو نامناسب قرار ديا۔ لیگی رہنماء کا کہنا تھا کہ نواز دشمنی ميں اتنا آگے نہيں جانا چاہيئے۔ چيزوں کو گہرائی ميں جا کر ديکھنا چاہيے کیونکہ شور شرابا کرنے سے معاملات خراب ہوتے ہيں۔

واضح رہے کہ ن لیگی رہنما ایاز صادق سے منسوب بیان سے متعلق کہا گیا ہے کہ انہوں نے قومی اسمبلی میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’ابھینندن کی تو بات ہی نہ کریں۔ مجھے یاد ہے شاہ محمود قریشی صاحب بھی اس میٹنگ میں تھے، جس میں وزیرِ اعظم نے آنے سے انکار کر دیا اور فوج کے سربراہ تشریف لائے۔ پیر کانپ رہے تھے، ماتھے پر پسینہ تھا، اور ہم سے شاہ محمود صاحب نے کہا کہ خدا کا واسطہ ہے، اب اس (ابھینندن) کو واپس جانے دیں کیونکہ اگر ایسا نہ ہوا تو رات 9 بجے بھارت پاکستان پر حملہ کرنے والا ہے۔ بھارت نے کوئی حملہ نہیں کرنا تھا، صرف گھٹنے ٹیک کر ابھینندن کو واپس بھیجنا تھا‘‘۔

سوشل میڈیا پر چلنے والی ایاز صادق کی ویڈیوز میں یہ بیان سامنے آنے پر حکومتی وزراء اور اراکین کی جانب سے ایاز صادق کے بیان کی سخت مذمت کی گئی۔ 29 اکتوبر کو ڈی جی آئی ایس پی آر کی جانب سے بھی ایاز صادق کے بیان سے متعلق وضاحت دی گئی۔

AYAZ SADIQ

aitzaz ahsan

Tabool ads will show in this div