سماجی کارکن کی بیٹی کےقتل کامعاملہ حل،2ملزمان گرفتار

دونوں ملزمان کے ایم سی ملازمین کے بیٹے ہیں

کراچی پولیس نے سماجی کارکن فیروز بنگالی کی بیٹی کے قتل کا معمہ حل کرتے ہوئے اسٹریٹ کرائمز میں ملوث 2 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔

ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راؤ کے مطابق 19 اکتوبر کی شام کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں فیروز بنگالی کی بیٹی کے قتل کا معاملہ حل کرلیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق قتل میں ملوث بلدیہ عظمیٰ کراچی ( کے ایم سی ) کے 2 ملازمین کے بیٹوں کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ دونوں قاتلوں کو سرکاری جیکٹ کی مدد سے گرفتار کیا گیا۔

سماجی کارکن کی بیٹی کی ٹارگٹ کلنگ کی ویڈیوسامنے آگئی

گرفتار ہونے والے دونوں ملزمان کے ایم سی ملازمین کے بیٹے ہیں۔ پولیس کا مزید کہنا ہے کہ واقعہ دشمنی نہیں بلکہ اسٹریٹ کرائم کا شاخسانہ ہے۔

قتل کا واقعہ 19 اکتوبر کی شام نارتھ ناظم اباد کے علاقے بلاک اے میں پیش آیا تھا۔ ملزمان نے بورڈ آفس کے قریب 4 لڑکیوں کو گاڑی میں جاتے دیکھا، تو ان کا تعاقب کیا اور نارتھ ناظم آباد کے بلاک اے تک لڑکیوں کے پیچھے آئے۔

حکام کے مطابق ملزم شکیل موٹرسائیکل چلا رہا تھا، جب کہ بلال عرف بلی پیچھے بیٹھا تھا۔ بلال نے اپنے والد کی کے ایم سی کی جیکٹ پہن رکھی تھی۔ بلال جیسے ہی واردات کیلئے موٹر سائیکل سے اترا، لڑکی نے گاڑی چلا دی۔ غصے میں اگر ملزم بلال نے فائر کھول دیا جو لڑکی کو لگا اور وہ جاں بحق ہوگئیں۔

واضح رہے کہ اسٹریٹ کرائم کی ویڈیو 20 اکتوبر کو منظر عام پر آئی تھی۔ جس میں ملزمان کو گاڑی کی جانب لڑکی پر سیدھا فائر کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ مقتولہ کی شادی 2013ء میں ہوئی تھی۔

FEROZ BENGALI

Tabool ads will show in this div