شہبازشریف ’’جوڈو کراٹے‘‘ نہیں چاہتے تھے،شیخ رشید

ملتان میں میڈیا سے گفتگو
Oct 14, 2020

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/Sheikh-Rasheed-1700-Sot-14-10.mp4"][/video]

وفاقی وزير ريلوے شيخ رشيد احمد کا کہنا ہے کہ شہباز شريف ’’جوڈو کراٹے‘‘ نہیں چاہتے تھے، اس لئے انہوں نے اپنی ضمانت واپس لی۔

ملتان ميں ميڈٰيا سے گفتگو کے دوران عوامی لیگ کے سربراہ اور وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد انہوں نے کہا کہ شہباز شریف نے محاذ آرائی کے بجائے جیل جانے کو ترجیح دی۔

شیخ رشید نے عمران خان کے جلسوں کے مقابلے میں اپوزيشن کے احتجاجی پروگرامز میں عوام کی کم شرکت کی پیشگوئی کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت کہیں نہیں جارہی ہے، اپوزيشن عمران خان جتنے لوگ جمع نہيں کرسکتی۔

انہوں نے اپوزیشن کی تحریک کی جانب اشارہ کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ 31 دسمبر سے پہلے جھاڑو پھر جائے گی۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ کارکنوں کو گرفتار نہيں کيا جانا چاہیے۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے دعویٰ کیا کہ مریم نواز شریف جلد پاکستان سے باہر چلی جائیں گی۔ تاہم اس حوالے سے شیخ رشید کا کہنا ہے کہ مریم کو باہر جانا ہوتا تو اس تحریک کی ضرورت ہی نہ پڑتی، مفاد پرستوں کا ٹولہ ہر وہ فيصلہ چاہتا ہے جوان کے خاندان کے حق ميں ہو۔

نواز شریف کے حالیہ بیانات پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لندن سے بيانات پاکستان ميں عدم استحکام کا ايجنڈا ہے۔ سینیٹ کے انتخابات کے حوالے سے شيخ رشيد نے دعویٰ کیا کہ اس میں برتری پی ٹی آئی کو حاصل ہوگی۔

MARYAM NAWAZ

Tabool ads will show in this div