نارا کینال میں نایاب نسل کے ہزاروں مگر مچھ آباد

عوام کا بقائے نسل کیلئے اقدامات کا مطالبہ

سکھر میں دریائے سندھ سے نکلنے والے نارا کینال میں نایاب نسل کے ہزاروں مگر مچھ آباد ہیں۔ عوام نے ان نایاب مگرمچھوں کے تحفظ اور افزائش نسل کیلئے اقدامات کا مطالبہ کیا ہے۔

سندھ وائلڈ لائف سکھر کے ڈپٹی کنزویٹر عدنان حامد کا کہنا ہے کہ نارا کنال میں صدیوں سے مگر مچھ رہتے ہیں۔ اس وقت نارا کنال میں 2000، چوٹیاری ڈیم میں 1000، ہالیجی لیک میں 250 اور دیھ آکرو میں 300 کے قریب مگر مچھ پائے جاتے ہیں۔

یہ چھوٹے بڑے مگر مچھ پانی کے اندر ہی اپنی خوراک تلاش کرلیتے ہیں۔ عدنان حامد کے مطابق ان کو یہاں سے نکالنا مشکل ہے۔ یہ پانی میں مرنے والے جانوروں، پرندوں اور آلائشوں پر گزارا کرتے ہیں جس کے باعث پانی آلائشوں سے پاک ہوجاتا ہے۔

شہریوں نے نایاب نسل کے خونخوار مگرمچھوں سے عوام کو محفوظ رکھنے اور ان کی نسل کو خاتمے سے بچانے کے لیے ضلعی انتظامیہ سے موثر اقدامات کا مطالبہ کیا ہے۔

Marine Life

Tabool ads will show in this div