ايم کيوايم اورپی پی پی مل کرسندھی مہاجرفسادچاہتےہيں،مصطفیٰ کمال

آئينی طورپرصوبہ بن نہيں سکتا
Oct 10, 2020

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/10/Mustufa-kamal-Khi-Montage-09-10-Ayaz.mp4"][/video]

پاک سرزمین پارٹی کےسربراہ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ اپوزیشن حکومت کوبھی گرانا چاہتی ہے اورمزے بھی پورے لينے ہيں،اپوزيشن کے بيک ڈور رابطے بھی ہوتے رہتے ہيں۔

جمعہ کوکراچی کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے سربراہ پاک سرزمين پارٹی مصطفیٰ کمال نے کہا کہ حکومت اقتدار بچانے ميں لگي ہے، ملک اس وقت خود بخود چل رہاہے۔

سربراہ پی ايس پی نے کہا کہ پيپلزپارٹی کی حکومت نےسندھ کا کيا حال کياہواہے،اس بارے میں کیا نوازشريف نے پيپلزپارٹی سے پوچھا نہيں، پی پی کےپليٹ فارم سےجمہوريت کی بات کررہےتھے۔

ایم کیو ایم اور پیپلزپارٹی سےمتعلق مصطفیٰ کمال نےکہا کہ پيپلزپارٹی 12 سال سےاقتدارميں ہےمگربتانےکوکچھ نہيں ہے،ايم کيوايم نےمہاجروں کونئےصوبے کا چورن بيچ دياہے۔ سربراہ پی ايس پی نے کہا کہ آئينی طورپرصوبہ بن نہيں سکتا،کيسےبناؤ گے کيا لڑو گے؟مصطفیٰ کمال نے یہ بھی کہا کہ ايم کيوايم کے نعرے کاسب سےزيادہ فائدہ پيپلزپارٹی کوہوتاہے،پیپلز پارٹی کہتی ہے کہ ہماری کرپشن بھول جاؤ،آؤ دھرتی ماں کوبچاتےہيں۔ انھوں نے مزید کہا کہ ابھی ايم کيوايم کووزارتيں دو،ايک دوسرےکواجرک ٹوپياں پہنارہےہوں گے۔مصطفیٰ کمال نےدعویٰ کیا کہ ايم کيوايم اور پيپلزپارٹي مل کرسندھ مہاجرفساد کرواناچاہتےہيں۔

مصطفی کمال نے کہا کہ کراچی میں گرين لائن کو بنےوقت گزرگيامگربسيں نہيں ہيں،ڈيزائن کی خرابی کابہانہ بناکر 2سال تک کےفورمنصوبہ روکا۔مصطفیٰ کمال نے کہا کہ اگراپوزیشن مخلص ہے توحکومت ايک گھنٹےميں ختم ہوجائےگی،اسمبليوں سے استعفیٰ ديں،حکومت ختم ہوجائے گی۔

مصطفیٰ کمال نےمزید کہا کہ حکومت يا اپوزيشن،کوئی بھی اس ملک سےمخلص نہيں ہے،اداروں کيخلاف باتيں کرنا ملک کيخلاف سازش ہے،سب اپنی غلطيوں کوتسليم کرکےايک ميزپرنيا معاہدہ کريں اوراختيارات وزيراعظم اوروزيراعلیٰ ہاؤس سےنکال کرگليوں تک لائیں۔

MUSTAFA KAMAL