چمن: پولیو ورکرز پر فائرنگ،سیکیورٹی پر مامور اہلکار زخمی

پولیو ورکرز محفوظ رہیں
[caption id="attachment_2051656" align="alignright" width="800"] فائل فوٹو[/caption]

چمن کے علاقے کلی حسن ٹھیکیدار میں نامعلوم افراد کی پولیو ورکرز پر فائرنگ سے سیکیورٹی پر مامور لیوی اہل کار زخمی ہوگیا۔

اسسٹنٹ کمشنر چمن ذکاءاللہ درانی کے مطابق پولیو ورکرز پر فائرنگ کا واقعہ اتوار 27 ستمبر کو پیش آیا۔ حملے میں پولیو ورکرز محفوظ رہے۔

اسسٹنٹ کشمنر کا مزید کہنا تھا کہ نامعلوم مسلح ملزمان کی جانب سے انسداد پولیو مہم میں کام کرنے والے خواتین پولیو ورکرز پر اس وقت فائرنگ کی گئی، جب وہ پولیو مہم کے دوران رہ جانے والے بچوں کو انسداد پولیو قطرے پلا رہی تھیں۔

اسسٹنٹ کمشنر نے مزید بتایا کہ مسلح حملہ آوروں نے سب سے پہلے فائرنگ خواتین پولیو ٹیم کی سکیورٹی پر تعینات لیویز اہلکار پر کی، اور اسے نشانہ بنایا۔ بعد ازاں ملزمان نے خواتین پولیو ٹیم پر بھی فائرنگ کی، تاہم وہ گھر کے اندر چھپ گئیں اور محفوظ رہیں۔

زخمی لیویز اہلکار کی شناخت محمد صادق کے نام سے کی گئی ہے، جسے ابتدائی طبی امداد کیلئے سول اسپتال چمن اور بعد ازاں کوئٹہ منتقل کیا گیا۔ حملہ آوروں کی تلاش کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

محکمہ صحت کی جانب سے پولیو ٹیم پر حملے کے بعد ضلع بھرمیں پولیو مہم کو غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کردیا گیا ہے۔

CHAMAN

Tabool ads will show in this div