سندھ بھرمیں گھروں میں گیس پریشرمیں کمی

صارفین پریشان
Sep 19, 2020
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/09/CNG-Closed-Khi-Aslive-19-09.mp4"][/video]

سندھ میں گيس کا بحران سنگین ہوگیا ہے۔سی این جی اسٹیشنز کی بندش سے پرائیوٹ ایمبولنس سروسز نے گاڑیاں کھڑی کیں تو ایدھی اور چیھپا پر لوڈ بڑھ گیا۔ گيس پريشرميں کمی کےباعث بجلی کی پيداوارمتاثرہونےسےکراچی کےبيشترعلاقوں ميں لوڈشيڈنگ بھی بڑھادی گئی ہے۔

سندھ بھر میں گھروں میں گیس پریشرمیں کمی کے بعد سی این جی اسٹیشن اتوارتک بندکردیےگئے ہیں۔گیس کی عدم فراہمی سے پبلک ٹرانسپوٹ سڑکوں سے غائب ہوگئی ہے۔رکشہ ڈرائيورز کاشکوہ ہے کہ پٹرول پر بچت نہيں ہوتی ہے۔

سی این جی کی عدم فراہمی کے باعث اندرونِ سندھ جانےاورچھوٹے پیمانے پرائیوٹ ایمبولنس چلانے والے کہتےہیں کہ گاڑیاں سی این جی پر ہیں،مریضوں کا سارا بوجھ ایدھی سروس اور چھیپا سروس پر آگیا ہے۔

ترجمان سوئی سدرن گیس کا کہنا ہے کہ5  گیس فیلڈ سے فراہمی متاثرہے،گيس پريشرميں کمی کےباعث بجلی کی پيداواربھی متاثرہےجس کی وجہ سےکراچی کے بيشترعلاقوں ميں لوڈشيڈنگ کادورانيہ 10گھنٹےسےبھی تجاوزکرگياہے۔

gas crisis