کراچی:5 سالہ بچی کا قتل،2مرکزی ملزمان گرفتار

ایک ملزم علاقے میں درزی کا کام کرتا ہے
فائل فوٹو

کراچی میں زیادتی کے بعد قتل کی جانے والی 5 سالہ بچی کے کیس میں اہم پیش رفت سامنے آگئی،۔ پولیس نے 2 مرکزی ملزمان کو پکڑنے کا دعویٰ کیا ہے۔

پولیس کے مطابق گرفتار کيا گيا ملزم فیض محلے میں درزی کا کام کرتا ہے۔ 5 سالہ بچی کو زیادتی کے بعد جب قتل کیا گیا تو ٹرالی کے ذریعے قریبی کچرا کنڈی میں لاش پھینکی گئی۔

دونوں ملزمان واردات کے وقت نشے ميں تھے، جن سے پوچھ گچھ جاری ہے۔ دوسرے ملزم کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ 5 سالہ بچی کی لاش 6 ستمبر کو برآمد کی گئی تھی۔ پولیس کی جانب سے ابتدائی طور پر قتل اور اغوا کے شہبے میں متعدد افراد کو گرفتار کیا گیا تھا، جن کے ڈی این اے ٹیسٹ بھی کرائے گئے۔

بچی پرانا سبزی منڈی سے اغوا ہوئی اور بعد ازاں تشدد زدہ جھلسی ہوئی لاش گھر کے قریب گروانڈ کے میں واقع کچرا کنڈی سے برآمد کی گئی۔

بچی کے والد نے بتایا کہ بیٹی دکان پر چیز لینے گئی تھی لکن واپس نہیں لوٹی۔ متاثرین نے الزام عائد کیا کہ بچی کے اغوا میں پڑوسی ملوث ہیں کیوں کہ اطلاع دینے والے ان کے پڑوسی نواز کی کمر پر خون بھی ملا تھا۔

پولیس نے شک کی بنا پر نواز اور اس کے بیٹے کو حراست میں لے لیا جبکہ پڑوسی کا ایک بیٹا فرار ہے۔ پولیس کا کہنا ہے بچی کی لاش تکے کے غلاف میں ملی ہے، جب کہ نواز کے گھر میں موجود تکیوں پر غلاف نہیں تھے۔ گھر کو بھی دھویا گیا ہے۔

RAPE CASE

Tabool ads will show in this div