مظفرگڑھ: سیلابی پانی داخل ہونے سے زمینی راستے منقطع

متاثرہ علاقوں میں ریسکیو آپریشن شروع نہ ہوسکا

دریائے سندھ اور دریائے چناب میں سیلابی صورتحال سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے جبکہ لوگ اپنی مدد آپ کے تحت محفوظ مقامات کا رخ کرنے پر مجبور ہوگئے۔

دریاؤں میں پانی کی سطح بلند ہونے سے تحصیل کوٹ ادو، تحصیل جتوئی، تحصیل علی پور اور مظفرگڑھ کے نشیبی علاقوں میں سیلابی پانی داخل ہونے سے زمینی راستے منقطع ہوگئے جبکہ لوگ اپنی مدد آپ کے تحت محفوظ مقامات کا رخ کرنے پر مجبور ہیں۔

متاثرہ علاقوں میں ریسیکو آپریشن شروع نا ہوسکا جبکہ فصلات دریا برد ہونے سے جانوروں کے لیے چارے کی قلت پیدا ہوچکی ہے۔

محکمہ انہار کے مطابق اس وقت دریائے سندھ میں ہیڈ تونسہ کے مقام پر پانی کی آمد اور اخراج 3 لاکھ 41 ہزار 958 کیوسک اور دریائے چناب میں ہیڈ پنجند کے مقام پر پانی کی آمد 1لاکھ 26ہزار اور اخراج 1لاکھ 12 ہزار ریکارڈ کی گئی ہے۔

MUZAFFARGARH

Tabool ads will show in this div