کے الیکٹرک کے منافع میں کمی، 2ارب 69کروڑ رہ گیا

جولائی تا اگست 2019ء کے خالص منافع میں 48فیصد کمی

کے الیکٹرک کا جولائی تا دسمبر 2019ء کے دوران خالص منافع 48 فیصد کمی سے 2 ارب 69 کروڑ روہے رہ گیا۔ مالیاتی رپورٹ میں منافع میں کمی کی وجہ ٹیکس کی ادائیگی اور اضافی لاگت بتائی گئی ہے۔

کراچی کو بجلی فراہم کرنیوالی کمپنی کے الیکٹرک نے جولائی تا دسمبر 2019ء کو ختم ہونیوالی ششماہی کے منافع سے متعلق رپورٹ جاری کردی، جس میں بتایا گیا ہے کہ ادارے کا خالص منافع 48 فیصد کمی سے 2 ارب 69 کروڑ ڈالر رہا۔

کے الیکٹرک نے جولائی تا دسمبر 2019ء کے مالیاتی نتائج پر مبنی رپورٹ پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں جمع کرادی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 31 دسمبر تک کیش ڈیویڈنڈ، بونس شیئرز اور رائٹ شیئرز نہیں دیا، جولائی 2018ء سے دسبمر 2018ء میں کے الیکٹرک کو 5 ارب 34 کروڑ روپے کا خالص منافع ہوا تھا۔

مالیاتی رپورٹ میں کے الیکٹرک کے منافع میں کمی کی وجہ ٹیکس کی ادائیگی اور اضافی فنانشل کاسٹ بتائی گئی ہے، کے الیکٹرک نے 31 دسمبر کو ختم ہونیوالی ششماہی میں 2 ارب 2 کروڑ روپے ٹیکس کی ادائیگی کی جبکہ گزشتہ سال اسی مدت میں کے الیکٹرک نے 71 کروڑ روپے ٹیکس کی ادائیگی کی تھی۔

رپورٹ کے مطابق جولائی تا دسمبر 2019ء فنانشل کاسٹ کی مد میں 8 ارب 4 کروڑ روپے کی ادائیگی کی گئی، جو جولائی تا دسمبر 2018ء میں 2 ارب 63 کروڑ روپے تھی۔

مالیاتی رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ کے الیکٹرک کی کل آمدنی 158 ارب 38 کروڑ روپے رہی، جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 145 ارب 44 کروڑ روپے تھی۔

KE

Tabool ads will show in this div