پاکستان سے بھارت جانے والے 11 ہندو قتل

ایک شخص تشویشناک حالت میں جودھپور اسپتال منتقل
Aug 10, 2020

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/08/Moodi-Killed-Pak-Hindus-Isb-Pkg-09-08.mp4"][/video]

پاکستان سے ہجرت کرکے بھارتی ریاست راجستھان میں بسنے والے بھیل خاندان کے 11 افراد کو قتل کردیا گیا۔ مرنے والوں میں 4 خواتین، 2 مرد اور 5 بچے شامل ہیں۔

پاکستانی دفتر خارجہ کی جانب سے راجستھان میں پاکستان سے جانے والے 11 ہندوؤں کے قتل کے واقعہ پر دکھ اور افسوس کا اظہار بھی کیا گیا ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستان ہائی کمیشن واقعہ پر بھارتی وزارت خارجہ سے رابطے میں ہے۔ ہائی کمیشن، بھارتی وزارت خارجہ سے واقعہ کی مزید تفصیلات حاصل کر رہا ہے۔ اموات کی وجوہات جاننے کی کوشش کر رہے ہیں۔

دوسری جانب راجھستان میں مقامی لوگوں نے ہلاکت پُراسرار قرار دے دی ہے۔ کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ تمام افراد کو بی جے پی کے کارکنوں نے مارا ہے۔ تمام افراد سندھ کے علاقے تھر پارکر سے کچھ عرصہ قبل راجستھان جا بسے تھے۔ خاندان کے تمام افراد اتوار کی صبح مردہ پائے گئے۔

خاندان کے ایک شخص کو تشویش ناک حالت میں جودھ پور کے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

Tabool ads will show in this div