امریکا عدم توازن میں اضافہ کرنیوالے اقدامات سے گریز کرے، سرتاج عزیز

sartaj-aziz1

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2015/10/SARTAJ-AZIZ-PKG-18-10-Mukkaram.mp4"][/video]

اسلام آباد : سرتاج عزیز کہتے ہیں پاک بھارت کشیدگی کے ماحول میں امریکا عدم توازن میں اضافہ کرنیوالے اقدامات نہ کرے، جوہری معاہدہ نہ ہونے پر تشویش نہیں، توقع ہے کہ پاکستان اور بھارت ایک ساتھ نیو کلیئر سپلائر گروپ کے ممبر بنیں گے۔

پاک بھارت کشیدگی پر تشویش بڑھ گئی، جنوبی ایشیا میں تناؤ پر مشیر امور خارجہ سرتاج عزیز نے گرما گرم گفتگو کی، برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں بولے کہ امریکہ ایسے اقدامات نہ کرے جو جنوبی ایشیاء میں پہلے سے موجود عدم توازن میں اضافے کی وجہ بنیں۔

انہوں نے کہا کہ پاک بھارت تعلقات پر ہمارا مؤقف یہی ہے کہ امریکا بھارت کے ساتھ جیسے بھی تعلقات رکھنا چاہتا ہے رکھ سکتا ہے لیکن ایسے وقت میں جب پاکستان بھارت میں کشیدگی ہے وہ روایتی اور اسٹریٹجک عدم توازن کو اتنا نہ بڑھائے کہ علاقے کی سالمیت کیلئے خطرہ پیدا ہو۔

سرتاج عزیز کہتے ہیں کہ جوہری معاہدہ نہ ہونے پر تشویش نہیں، بھارت کو بھی جوہری معاہدے کا خاطر خواہ فائدہ نہیں ہوا، مجھے اُمید ہے پاکستان اور بھارت ایک ساتھ نیو کلیئر سپلائر گروپ کے ممبر بنیں گے۔

مشیر خارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن مذاکرات کیلئے ہر ممکن تعاون کریں گے، نواز شریف، اوبامہ ملاقات میں اس معاملے پر بات چیت ہوگی۔

مشیر خارجہ کا کہنا تھا کہ بنیادی ترجیح قومی مفاد اور اپنی سکیورٹی ہے، اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ سماء

PM

USA

TALIBAN

sartaj aziz

british

Foreign Advisore

Nuclear Supplier Group

Atomic Deal

Tabool ads will show in this div