آصف زرداری کے حوالے سے افواہیں دم توڑ گئیں

پیشی کے دوران انہیں بولتے اور مسکراتے دیکھا گیا

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/07/Asif-Zardari-Health-Isb-Pkg-06-07.mp4"][/video]

پاکستان کے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی صحت و زندگی کے حوالے سے گزشتہ چند ماہ سے سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی تمام افواہیں پیر کو غلط ثابت ہوگئیں۔

آصف علی زرداری کی ویڈیو لنک کے ذریعے احتساب عدالت میں پیشی نے ان تمام افواہوں اور قیاس آرائیوں کی تردید کر دی۔

اس دوران آصف زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے اپنے وکیل سے گفتگو بھی کی۔ دوارن پیشی آصف علی زرداری بلاول ہاؤس کراچی میں اپنے بیڈ پر دراز رہے وہ کبھی زیر لب مسکرائے تو کبھی بلند آواز سے گفتگو کی۔

یاد رہے کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران سوشل میڈیا پر اکثر زرداری کی رحلت کے حوالے سے مختلف پوسٹ اپ لوڈ ہو رہی تھیں۔ کچھ ویڈیوز میں تو خاصے معتبر دکھائی دینے والے حضرات یہ دعوے کرتے رہے کہ انہیں بڑے باوثوق ذرائع سے اطلاعات ملی ہیں کہ آصف علی زرداری کا انتقال ہوچکا ہے۔

ایک ویڈیو میں جو گزشتہ رمضان میں سوشل میڈیا پر جاری کی گئی تھی ایک صاحب نے 'انکشاف' کیا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی اور اہل خانہ زرداری کی خبر اس وجہ سے چھپا رہے ہیں کہ اس بات کا اعلان رمضان کی 27 ویں شب کو کیا جائے گا۔ الغرض اس طرح کی تمام مبینہ باوثوق خبریں جعلی ہی ثابت ہوئیں۔

آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک کا کہنا تھا کہ جب بیماری آتی ہے انسان کبھی اچھا ہو جاتا ہے کبھی اس کی حالت ابتر ہوجاتی ہے اللہ کا شکر ہے زرداری کی طبیعت فی الوقت بہتر ہے اور جب وہ اسکائپ پر آئے تو انہیں صحیح سلامت دیکھ بھی لیا گیا۔

دوران سماعت آصف زرداری نے جب اپنے وکیل سے آئندہ لائحہ عمل کے حوالے سے پوچھا تو فاروق نائیک نے جواب دیا کہ ہم نے فرد جرم عائد کرنے سے روکنے کی درخواست دی ہے اور اب پہلے وہ سنی جائے گی پھر فرد جرم کا فیصلہ ہوگا۔

اس پر زردادی نے مزید دریافت کیا کہ کیا فرد جرم کے بعد ٹرائل شروع ہو جائے گا تو فاروق نائیک نے جواباً کہا کہ جی ہاں اس کے بعد ٹرائل شروع ہو جائے گا۔

ASIF ALI ZARDARI

Tabool ads will show in this div